سببارام دیکشیتار

سببارام دیکشتر (انگریزی: Subbarama Dikshitar) (ولادت: 1839ء – وفات: 1906ء)[1] کارناٹک میوزک کے نغمہ ساز تھے۔ وہ موتوسوامی دیکشیتار کے بھائی اور بلوسوامی دیکشتر کے پوتے تھے۔ وہ اپنے طور پر ایک باکمال نغمہ ساز، لیکن اپنی سنگیت سمپراڈیا پردشینی کے لئے زیادہ مشہور ہے، یہ کتاب متھوسوامی دیکشتر کے کام کی تفصیل اور بہت سے دوسرے کارناٹک میوزیکل تصورات پر ایک ماخذ ہے۔

سببارام دیکشیتار
Subbarāma Dīkṣita.png
 

معلومات شخصیت
تاریخ پیدائش سنہ 1839  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تاریخ وفات سنہ 1906 (66–67 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ نغمہ ساز  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

حالات زندگیترميم

بال سوامی دیکشتر، ایک مشہور موسیقار، ایٹیا پورم بادشاہوں کے درباریوں میں سے تھے۔ انہوں نے سببارام دیکشتر کو اپنا بیٹا مانا اور ان کو موسیقی سکھایا۔ سببارام دیکشتر نے سترہ سال کی عمر میں نغمہ ساز کا آغاز کیا اور انیسویں سال کی عمر میں ایٹیا پورم بادشاہوں کے درباری موسیقار بن گئے۔ انہوں نے بہت ساری کرتیس، ورنم کو مرتب کیا۔

سببارام دیکشتر نے 60 سال کی عمر میں اے۔ ایم۔چھنسوامی مدلیار کے کہنے پر سنگیت سمپراڈیا پردشینی کتاب لکھنا شروع کی اور چار سال کی محنت کے بعد اسے مکمل کیا۔ یہ کہا جاسکتا ہے کہ وہ ہندوستانی موسیقی اور موسیقی کے ابتدائی دستاویز سازوں میں شامل تھے۔

سببارام دیکشتر 67 سال کی عمر میں انتقال کر گئے۔

سببارام دیکشتر کے دیگر کاموں میں یہ شامل ہیں:

  • پرتھامابھیاس پستاکامو - کارناٹک میوزک کا ابتدائی تعارف
  • سنسکرتہ آندھرا درایڈا کیرتنالو - کرشنسوامی آییا اور ان کی تشکیل کردہ دوسروں کی ترکیب کا مجموعہ

مزید دیکھیےترميم

بیرونی روابطترميم

ماخذترميم

  • Bakhle، Janaki (2005). Two men and music: nationalism in the making of an Indian classical tradition. Oxford University Press. ISBN 9780195166101. 

حوالہ جاتترميم

  1. Bakhle 2005, Chapter 3, page 11.