ماضی مطلق وہ فعل ہوتا ہے جو صرف گزرے ہوئے زمانے کو ظاہر کرتا ہے۔ جیسے عارف نے کتاب پڑھی، ناصر لاہور گیا، حنا نے خط لکھا، راشدہ نے کھانا کھایا، وغیرہ اِن جملوں میں پڑھی، گیا، لکھا اور کھایا ماضی مطلق ہے۔

ماضی مطلقترميم

ماضی مطلق کا مفہومترميم

ماضی مطلق وہ فعل ہوتا ہے جو صرف گزرے ہوئے زمانے کو ظاہر کرتا ہے۔

یا

ایسا فعل جو دُور یا قریب کی قید کے بغیر گزرے ہوئے زمانے کو ظاہر کرتا ہے ماضی مطلق کہلاتا ہے۔

یا

وہ فعل جس میں کسی کام کا کرنا یا ہونا مطلق گزرے ہوئے زمانے میں پایا جائے۔

مثالیںترميم

عارف نے کتاب پڑھی، ناصر لاہور گیا، حنا نے خط لکھا، راشدہ نے کھانا کھایا، وغیرہ اِن جملوں میں پڑھی، گیا، لکھا اور کھایا ماضی مطلق ہے۔

ماضی مطلق بنانے کا قاعدہترميم

یہ فعل مصدر کی علامت ”نا“ دور کر کے ”ا“ یا ”ی“ بڑھا دینے سے بنتا ہے۔ افعال لازم میں اس کی گردان فاعل کے مطابق ہوتی ہے، جبکہ افعال متعدی مفعول کے جنس کے حساب سے تبدیل ہوتے ہیں اور فاعل میں نے لگ جاتا ہے۔ اگر مفعول میں "کو" لگا ہو یا اگر مفعول ایک باجان ضمیر ہو تو فعل مذکر واحد شکل میں آتا ہے۔

مثالیں

پڑھنا سے پڑھا، کھانا سے کھایا، دیکھنا سے دیکھا، آنا سے آیا، کھیلنا سے کھیلا، پینا سے پیا، وغیرہ

ماضی مطلق کی گردانترميم

آنا مصدر سے ماضی مطلق کی گردان

واحد غائب جمع غائب واحد حاضر جمع حاضر واحد متکلم جمع متکلم
وہ آیا وہ آئے تو آیا تم آئے میں آیا ہم آئے
وہ آئی وہ آئیں تو آئی تم آئیں میں آئی ہم آئیں

ہنسنا مصدر سے ماضی مطلق کی گردان

واحد غائب جمع غائب واحد حاضر جمع حاضر واحد متکلم جمع متکلم
وہ ہنسا وہ ہنسے تو ہنسا تم ہنسے میں ہنسا ہم ہنسے
وہ ہنسی وہ ہنسیں تو ہنسی تم ہنسیں میں ہنسی ہم ہنسیں

سونا مصدر سے ماضی مطلق کی گردان

واحد غائب جمع غائب واحد حاضر جمع حاضر واحد متکلم جمع متکلم
وہ سویا وہ سوئے توسویا تم سوئے میں سویا ہم سوئے
اوہ سوئی وہ سوئیں تو سویا تم سوئے میں سویا ہم سوئے

لکھنا مصدر سے ماضی مطلق کی گردان

واحد غائب جمع غائب واحد حاضر جمع حاضر واحد متکلم جمع متکلم
اس نے اکھا انہوں نے لکھا تو نے لکھا تم نے لکھا میں نے لکھا ہم نے لکھا
اس نے لکھی انہوں نے لکھی تو نے لکھی تم نے لکھی میں نے لکھی ہم نے لکھی
اس نے لکھے انہوں نے لکھے تو نے لکھے تم نے لکھے میں نے لکھے ہم نے لکھے
اس نے لکھیں انہوں نے لکھیں تو نے لکھیں تم نے لکھیں میں نے لکھیں ہم نے لکھیں

چند افعال ماضی مطلق کی قائدہ سے الگ گردان کرتے ہیں۔ مثلاً کرنا اور جانا:

جانا مصدر سے ماضی مطلق کی گردان

واحد غائب جمع غائب واحد حاضر جمع حاضر واحد متکلم جمع متکلم
وہ گیا وہ گئے تو گیا تم گئے میں گیا ہم گئے
وہ گئی وہ گئیں تو گئی تم گئیں میں گئی ہم گئیں

کرنا مصدر سے ماضی مطلق کی گردان

واحد غائب جمع غائب واحد حاضر جمع حاضر واحد متکلم جمع متکلم
اس نے کیا انہوں نے کیا تو نے کیا تم نے کیا میں نے کیا ہم نے کیا
اس نے کی انہوں نے کی تو نے کی تم نے کی میں نے کی ہم نے کی
اس نے کیے انہوں نے کیے تو نے کیے تم نے کیے میں نے کیے ہم نے کیے
اس نے کیں انہوں نے کیں تو نے کیں تم نے کیں میں نے کیں ہم نے کیں

مفعول کے ساتھ مثالیںترميم

  1. میں نے جامن کھایا۔
  2. میں نے روٹی کھائی۔
  3. میں نے جامن کھائے۔
  4. میں نے روٹیاں کھائیں۔

حوالہ جاتترميم

[1][2]

  1. آئینہ اردو قواعد و انشاء پرزادی
  2. آئینہ اردو