کلیات کلی کی جمع ہے، جو عربی اسم ہے اور مذکر و مونث دونوں طرح بولا جا سکتا ہے۔ اردو میں اصل معنی و ساخت کے ساتھ بطور اسم استعمال ہوتا ہے۔ سب سے پہلے 1818ء کو "کلیات انشا" میں مستعمل ملتا ہے۔[1] اصطلاح ادب میں ایک ہی شخص کی منظومات یا تصنیفات کے مجموعے کو کلیات کہا جاتا ہے۔ نظم اور نثر کی قید اس میں نہیں پائی جاتی۔

حوالہ جاتترميم

  1. "کلیات؛ ارد ولغت پر". اردو لغت. 2013. اخذ شدہ بتاریخ 21 ستمبر 2016.