بیت اللہ محسود کا دوسرا بڑا اتحادی گروپ ہے جو خیبرایجنسی اور اورکزئی ایجنسی میں اثرورسوخ رکھتا ہے کہا جاتا ہے کہ یہ اغوا برائے تاوان اور دہشت گردی کی کاروائیوں میں ملوث رہا ہے۔ یہ گروپ پشاور اور ڈیرہ اسماعیل خان کی کاروائیوں کی زمہ داری قبول کر چکا ہے۔ قاری حسین گروپ سے اس گروپ کے شدید نوعیت کے اختلافات پائے جاتے ہیں۔