استار دواؤں یا سونا چاندی کے تولنے کا ایک وزن جو یونانیوں سے لیا گیا۔ اس کا اندازہ بالعموم دو مختلف پیمانوں سے لیا جاتا ہے۔

  • استار درہم کے حساب سے ساڑھے چھ درہم کے برابر اور مثقال کے حساب سے ساڑھے چار مثقال کے برابر ہوتا ہے۔[1]
  • ایک معادلہ تو یہ ہے کہ ایک استار=6 درہم اور2 دانق=4 مثقال۔ دوا فروشوں کا استار۔ یہ رطل کے لحاظ سے رطل مدنی کا 1/30 اور رطل عراقی کا 1/20 ہے
  • دوسرا یہ ہے کہ ایک استار = ساڑھے 6 درہم =ساڑھے 4 مثقال۔[2]

عہد نبوی میں استارترميم

وَالْإِسْتَارُ أَيْضًا وَزْنُ أَرْبَعَةِ مَثَاقِيلَ وَنِصْفٍ [3]

  • ایک استارساڑھے چار مثقال کا ہوتا ہے
  • اردو میں ایک مثقال کا وزن ساڑھے چار ماشہ ملتا ہے لہذا ایک استارکا وزن یہ ہوگا
  • ایک استار=ایک تولہ آٹھ ماشہ اور دو رتی =19.683گرام[4]

حوالہ جاتترميم

  1. جواہر الفقہ، جلد سوم ،صفحہ391، مفتی محمد شفیع ،مکتبہ دار العلوم کراچی
  2. دائرہ معارف اسلامیہ جلد2 صفحہ541 جامعہ پنجاب لاہور
  3. مختار الصحاح مؤلف: زين الدين أبو عبد اللہ الحنفی الرازی
  4. اسلامی اوزان،فاروق اصغر صارم، صفحہ19