اسکوٹر (موٹرسیکل)

چاندی کے رنگ والی ویسپا اسکوٹر کی ایک تصویر
لیمبریٹا کے ایک ابتدائی ماڈل کی اسکوٹر کی ایک تصویر

اسکوٹر (جسے کئی بار موٹر اسکوٹر بھی کہا جاتا ہے تاکہ کِک اسکوٹر سے مغالطہ نہ ہو) ایک طرح کی موٹرسیکل ہے جس کے آگے ایک فریم ہے جس سے سوار آگے آتا ہے اور سامنے وافر جگہ ہے جہاں پر کہ گاڑی چلانے والا آرام سے اپنے پاؤں رکھ سکتا ہے۔ اسکوٹر ڈیزائن کے عناصر اولین موٹرسیکلوں میں بھی موجود رہے ہیں۔ کئی موٹر سیکل جو 1914ء یا اس سے پہلے بنے ہیں بعینہ اسکوٹر کے مشابہ ہیں۔ اسکوٹروں میں ترقی یورپ اور ریاستہائے متحدہ امریکا میں دونوں عظیم جنگوں کے دوران جاری رہی۔

عالمی سطح پر اسکوٹروں کی مقبولیت دوسری جنگ عظیم سے چلتی آئی ہے۔ اس وقت دو نئے ماڈل ویسپا اور لیمبریٹا متعارف ہوئے تھے۔ یہ اسکوٹروں کا مقصد ایک کفایت شعار حمل و نقل کا ذریعہ فراہم کرنا تھا (جس میں 50 سے 250 سی سی یا 3.1 سے 15.3 سی یو انجن ہوں)۔ ابتدائی خاکہ جیسا کہ تیار کیا گیا تھا، وہ اب بھی کثیر الاستعمال ہے۔ میکسی اسکوٹر، جس کے انجن 250 سے 850 سی سی (15 سے 52 سی یو) مغربی ممالک کے بازاروں کے لیے تیار کیے گئے ہیں۔

اسکوٹر شخصی حمل و نقل کا ایک مقبول ذریعہ ہے، جس کی جزوی وجہ اس کی کفایت شعاری ہے، متصلًا چلانے کی سہولت ہے اور پارکنگ اور رکھنے کے فائدے ہیں۔ دنیا کے بیش تر حصوں میں لائسنس کا حصول کاروں کے مقابلے آسان اور سستا ہے اور انشورنس عمومًا کم قیمت ہے۔

اسکوٹر گیئروں کے ساتھ اور اس کے بغیر بھی بنائے گئے ہیں۔

مزید دیکھیےترميم

حوالہ جاتترميم

بیرونی روابطترميم