استاد بندو خان 1880ء میں دہلی میں پیدا ہوئے تھے۔ ان کے والد علی جان خان بھی سارنگی بجاتے تھے اور استاد ممّن خان، جنھوں نے سر ساگر ایجاد کیا ان کے ماموں تھے۔ استاد بندو خان نے سالہا سال اپنے ماموں سے سارنگی کے اسرار و رموز سیکھے پھر وہ ایک ملنگ میاں احمد شاہ کے شاگرد ہوئے جنھوں نے انتہائی شفقت اور محبت سے بندو خان کو اپنے علم کا سمندر منتقل کر دیا۔ [1] قیام پاکستان کے بعد بندو خان پاکستان چلے آئے اور ریڈیو پاکستان سے وابستہ ہو گئے۔ [2] ایک مختصر سی علالت کے بعد 13 جنوری 1955ء کو ان کا انتقال ہو گیا۔ استاد بندو خان کوان کی وفات کے چار برس بعد 1959ء میں صدارتی تمغا برائے حسن کارکردگی سے نوازا گیا۔ وہ کراچی میں آسودہ خاک ہیں ۔

بندو خان
معلومات شخصیت
تاریخ پیدائش سنہ 1880  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تاریخ وفات سنہ 1955 (74–75 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of India.svg بھارت (26 جنوری 1950–)
British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند (–14 اگست 1947)
Flag of India.svg ڈومنین بھارت (15 اگست 1947–26 جنوری 1950)  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ موسیقار  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اعزازات

حوالہ جاتترميم

  1. 'Tribute to a Maestro' - Profile of sarangi player Bundu Khan آرکائیو شدہ [Date missing] بذریعہ itcsra.org [Error: unknown archive URL], ITC Sangeet Research Academy website, Retrieved 20 August 2018
  2. Noted sarangi player of Pakistan–Bundu Khan on the-south-asian.com website, Published April 2001, Retrieved 20 August 2018