ایک اسم مصدر جو کیفیت کو بیان کرتا ہے، حروف کی زبر زیر پیش کا لحاظ رکھتے ہوئے صاف طور پر آہستہ ادائیگی کا عمل۔[1]ترتیل ایک قرآنی اصطلاح، جس کا مطلب ہے، قرآن کو خوب ٹھہر ٹھہر کر پڑھنا۔[2] قرآن کو ترتیل سے پڑھنے کا حکم خود قرآن میں موجود ہے۔

وَرَتِّلِ الْقُرْآنَ تَرْتِيلاً، اور قرآن کو ٹھہر ٹھہر کر (صاف پڑھا کر )[3]

مزید دیکھیےترميم

حوالہ جاتترميم

  1. ترتیل کے معنی
  2. امام احمد رضا خان، احکام ترتیل، صفحہ 19
  3. قرآن مقدس،سورہ مزمل، آیت4