"مہپارہ" کے نسخوں کے درمیان فرق

9 بائٹ کا اضافہ ،  2 مہینے پہلے
م
خودکار: درستی املا ← اور، ہو گیا؛ تزئینی تبدیلیاں
(Wikilinks)
م (خودکار: درستی املا ← اور، ہو گیا؛ تزئینی تبدیلیاں)
'''مہ پارہ''' / '''مہپارہ''' ({{lang-en|Meh Parah}}) سندھی فلمی اداکارہ تھیں.<ref name=":1" /><ref name=":2">{{Cite web|url=https://cineplot.com/mahpara/|title=Mahpara – Cineplot.com|last=says|first=Alleem|language=en-US|access-date=2020-03-20}}</ref> وہ [[حیدرآباد، سندھ|حیدرآباد ، سندھ]] میں پیدا ہوئی تھیں۔انہوں نے اپنے کیریئر کا آغاز 1968 میں [[سولی وڈ|سندھی سنیما]] فلم شھرو فیروز سے کیا تھا۔وہ 1960 کی دہائی میں سندھی ، پنجابی اور اردو فلموں کی مشہور اداکارہ تھیں۔مہپارہ نے [[مشتاق چنگیزی]] کے ساتھ بطور ہیروئن متعدد فلموں میں کام کیا۔
== ابتدائی زندگی ==
مہپارہ کی پیدائش [[سندھ]] کے شہر [[حیدرآباد، سندھ|حیدرآباد]] میں ہوئی تھی۔
 
== ذاتی زندگی ==
مہپارہ نے اقبال یوسف کے ساتھ شادی کی ، اس نے اقبال یوسف سے شادی کے فورا بعد ہی فلم انڈسٹری چھوڑ دی ، اس کے شوہر کا 1999 میں انتقال ہوگیاہو گیا.اپنے شوہر کی موت کے بعد اس نے خود کو فلم انڈسٹری کے ساتھیوں سے جوڑ لیا اور مقامی پریس اور اشتہاروں میں کام کیا۔
 
== کیریئر ==
انہیں فلم میں شیخ حسن نے متعارف کرایا تھا اور ان کی پہلی فلم 1968 میں شیرو فیروز تھی جس میں انہوں نے ہیروئن کا کردار ادا کیا تھا۔بعد میں انہوں نے [[سولی وڈ|سندھی سنیما]] کی بہت سی فلموں میں کام کیا۔ مہپارہ نے پاکستانی فلمی صنعت میں قدم رکھا جس کو لالی ووڈ کے نام سے جانا جاتا ہے ، اس سے پہلے وہ سندھی فلموں میں ہیروئن تھیں جو [[سولی وڈ|سالی ووڈ]] کے نام سے مشہور تھیں۔انہوں نے سندھی فلم شہرو فیروز میں ہیروئن کا مرکزی کردار ادا کیا ، جس کی ہدایتکاری خادم بلوچ اور شیخ حسن نے کی تھی۔چانڈوکی سندھی سنیما میں ان کی اگلی فلم تھی جو 1969 میں ریلیز ہوئی تھی ، اور وہ اس فلم میں مشتاق چنگیزی کے ساتھ ہیروئن تھیں۔1960 کی دہائی میں اردو فلم انڈسٹری بہت سی نئی فلمیں تیار کر رہی تھی اور ہر فلمی صنعت کا اسٹار پاکستانی فلم ڈائریکٹرز کے ساتھ اردو فلم انڈسٹری میں کام کرنے کا ارادہ رکھتا تھا۔مہپارہ کو فلم شمع پروانہ میں ایک کردار ملا ، یہ فلم کراچی میں بنی تھی ، اور نواب احمد اس فلم کے ہدایتکار تھے۔پنجابی سنیما میں مہپارہ کی پہلی فلم اصغرہ تھی ، یہ فلم 1971 میں ریلیز ہوئی تھی اور اس کی ہدایتکاری خالد سعید نے کی تھی.1971 ان کا بہترین سال تھا جس میں انہوں نے سندھی فلم لیلی مجنوں میں کام کیا تھا جس کی ہدایت کاری ایس اے گفار نے کی تھی۔ان کی 1971 میں دوسری فلم آنسو تھی ، اسی سال ان کی فلم آک سپیرا بھی ریلیز ہوئی تھی۔
 
== فلموگرافی ==
* ان کی مشہور سندھی فلمیں شہرو فیروز 1968،<ref name=":0">{{Cite web|url=https://pakmag.net/film/db/details.php?pid=733|title=Pakistan Film Database - پاکستان فلم ڈیٹابیس - Lollywood Movies|website=pakmag.net|access-date=2020-03-20}}</ref> چانڈوکی 1969، لیلیلا مجنوں 1971 تھیں<ref name=":1">{{Cite web|url=https://pakmag.net/film/artist/Mahpara.php|title=Mahpara|website=pakmag.net|access-date=2020-03-20}}</ref><ref name=":1" />
* اس کی اردو فلمیں شمع پارا، روڈ ٹو سوات جو 1970 میں ریلیز ہوئی تھیں، روتھا نہ کرو 1971 ، آنوسو 1971 ، آک سپیرا 1971 ، ہل اسٹیشن ١٩٧٢ تھیں
* ان کی پشتو فلم یوسف خان شیر بانو تھی جو 1970 میں رلیز ہوئی تھی
* پنجابی فلمیں شیر پوتر 1971 ، اصغرا 1971 ، یار بادشاہ 1971 ، کاسو ، 1972 تھیں
 
== حوالہ جات ==
{{حوالہ جات|2}}
 
== بیرونی روابط ==
* [https://www.youtube.com/watch?v=O_qwesFZ_BI Pakistani Filmstar Mahpara Then And Now 2018]
* [https://www.youtube.com/watch?v=aiNAV951DXw MAHPARA interview]
102,778

ترامیم