خطوہ معنی پاؤں کے ہیں لمبائی ناپنے کا ایک نام
الخُطْوَةُ،: ما بينَ القَدَمَيْنِ درمیانے قد کے آدمی کی عام چال چلتے وقت دو پاؤں کے درمیانی فاصلے اور مقدار کو خطوہ کہا جاتا ہے ایک میل کے چار ہزار اجزاء میں سے ایک جز کو خطوہ کہتے ہیں یعنی ایک میل چار خطوہ کے برابر ہے۔

شرعی حکمترميم

خطوہ کے ساتھ کوئی شرعی حکم وابستہ نہیں البتہ اس کے ساتھ ضمنا تذکرہ بعض احکام میں ہوتا ہے جیسے ابن قدامہ نے تیمم کے احکام میں لکھا ہے[1]

اردو اور اعشاری نظامترميم

چلتے وقت دوپاؤں کے درمیان میں فاصلہ تقریباً ایک فٹ ہوتا ہے
نوٹ: پیمائش کرنے والے 12 انچ کے آلے کو بھی فٹ کہا جاتا ہے فٹ کا معنی قدم ہے اور یہ ایک قدم کی پیمائش کو ظاہر کرتا ہے
ایک قدم= ایک فٹ= 304٫8 ملی میٹر۔[2]

حوالہ جاتترميم

  1. موسوعہ فقہیہ ،جلد38 صفحہ337، وزارت اوقاف کویت، اسلامک فقہ اکیڈمی انڈیا
  2. اسلامی اوزان صفحہ 76،فاروق اصغر صارم،ادارہ احیاء التحقیق الاسلامی گوجرانوالہ