دارالعلوم محمدیہ غوثیہ بھیرہ

دار العلوم محمدیہ غوثیہ ضلع سرگودھا کے تاریخی قصبے بھیرہ میں قائم دینی تعلیم کا ایک مرکز ہے۔

مرکزی عمارت دارالعلوم محمدیہ غوثیہ بھیرہ

تاریخترميم

یہ ادارہ ابتدائی طور پر 1925ء میں معرض وجود میں آیا، جس کی بنیاد بیر محمد کرم شاہ کے والد گرامی پیر محمد شاہ نے رکھی تھی۔ جسٹس پیر محمد کرم شاہ الازہری اس تعلیمی ادارے کے پہلے طالب علم تھے۔

نشاۃ ثانیہترميم

جسٹس پیر محمد کرم شاہ الازہری کے عظیم کارناموں میں سے ایک دار العلوم محمدیہ غوثیہ کی وقت، حالات اور ماحول کے مطابق نشاۃ ثانیہ ہے۔

یونیورسٹیترميم

اس وقت یہ ادارہ ایک عظیم الشان یونیورسٹی کی شکل اختیار کرچکا ہے۔ اس دار العلوم کی صرف پاکستان میں تین سو سے زیادہ شاخیں موجود ہیں۔[1]

فارغ التحصیل طلبہترميم

ہزار ہا طلبہ و طالبات اس دار العلوم سے فارغ التحصیل ہو کر دنیا بھر میں زندگی کے مختلف شعبوں میں خدمات سرانجام دے رہے ہیں۔

حوالہ جاتترميم

  1. "Zia-ul-ummat.com". 09 جولا‎ئی 2016 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 19 فروری 2017. 
  یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کر کے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔