سیدہ مہ پارہ شاہد بخاری ، جسے سیدہ مہ پارہ یا مہ پارہ شاہد کے نام سے بھی جانا جاتا ہے (پیدائش 8 جولائی 1993) ، [1] پاکستان سے تعلق رکھنے والی ایک بین الاقوامی فٹ بال کھلاڑی ہے۔ وہ قومی ٹیم میں گول کیپر کے حیثیت سے کھیلتی ہیں۔

مہ پارہ شاہد
Syeda Mahpara Shahid.jpg
 

شخصی معلومات
پیدائش 7 اگست 1993 (28 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پاکستان  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Pakistan.svg پاکستان  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
قد 1.64 میٹر  ویکی ڈیٹا پر (P2048) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کھیلنے کی معلومات
کھیلنے کا مقام گول کیپر
حالیہ معلومات
حالیہ معلومات روسونری ویمن ایف سی
کلب فٹ بال1
سال

ٹیم

گول

(گول)

2007–2013

ینگ رائزنگ سٹارز ایف ایف سی

2013–2016

بلوچستان یونائیٹڈ

6

(0)
2016

ہائی لینڈرز ایف سی

2017 –

روسونری ویمن ایف سی

قومی ٹیم

پاکستان

3

(0)


1 بعض اوقات ظہور بذریعۂ انجمن اور تعداد ہدف مقامی جمعیت کے لیے شمار کیے جاتے ہیں

2 عدد مرات الظهور بالمنتخب وعدد الأهداف

کیریئرترميم

قومیترميم

انہوں نے 2007 میں ینگ رائزنگ اسٹارز ایف ایف سی کے ساتھ بطور ڈیفینڈر اپنے کیریئر کا آغاز کیا [2] انہوں نے 2008 میں گول گیپر کی حیثیت سے کھیلنا شروع کیا۔

وہ نیشنل چیمپیئن شپ برائے بلوچستان یونائیٹڈ ڈبلیو ایف سی میں کھیلتی ہیں۔ 2014 میں وہ کلب کی جیتنے والی ٹیم کا حصہ تھیں۔

اس نے اور ٹیم کے ساتھی زلفہ شاہ نے روسونی ویمنز ایف سی کے ساتھ معاہدہ کیا اور یہ کلب اطالوی جائنٹس اے سی میلان کے نام پر ہے - اور دبئی میں سابق پیٹ فٹ بال ایسوسی ایشن لیگ میں شامل ہے۔

بین اقوامیترميم

مہ پارہ اس قومی ٹیم کا کی رکن تھیں جس نے اسلام آباد ، پاکستان میں منعقدہ تیسری ایس اے ایف ایف چیمپین شپ میں حصہ لیا۔ [1] وہ تینوں میچوں میں بمقابلہ سری لنکا ، نیپال اور بھوٹان ) کھیلی۔

ایوارڈترميم

  • بہترین گول کیپر (قومی چیمپئن شپ): 6 ( 2008 ، 2010 ، 2011 ، 2012 ، 2013 ، 2020 )۔ [2]

بین الاقوامی اعدادوشمارترميم

سال ٹیم میچ گول
2010 – موجودہ پاکستان خواتین قومی فٹ بال ٹیم 3 0

اعزازترميم

  • نیشنل ویمن فٹ بال چیمپین شپ : 2014 ، 2020

حوالہ جاتترميم

  1. ^ ا ب Syeda Mahpara آرکائیو شدہ [Date missing] بذریعہ pakfootball.org [Error: unknown archive URL] PFF Official website. Retrieved 20 May 2016
  2. ^ ا ب Syeda Mahpara Shahid footballworldzone blog. Retrieved 20 May 2016

 

مہ پارہ شاہد انٹرویو[مردہ ربط]

بیرونی روابطترميم