قات

قات (Khat یا Qat) (عربی: قات) [1] قرن افریقہ اور جزیرہ نما عرب کا ایک مقامی پھول دار پودا ہے۔ ان علاقوں کے لوگوں میں قات چبانے کی تاریخ ہزاروں سال پرانی ہے۔[2]

ضابطہترميم

1980 میں عالمی ادارہ صحت قات کی درجہ بندی ایک نشہ آور پودے کے طور پر کی (تمباکو یا شراب سے کم) "[3]

افریقہترميم

ایتھوپیاترميم

قانونی - ایتھوپیا۔[4]

صومالیہترميم

قانونی - صومالیہ۔<[4]

جبوتیترميم

قانونی - جبوتی۔[5]

کینیاترميم

قانونی - کینیا۔[6]

جنوبی افریقہترميم

جنوبی افریقہ میں، قات ایک محفوظ درخت ہے۔[7]

ایشیاترميم

چینترميم

غیر قانونی - چین.[8]

اسرائیلترميم

بنیادی طور پر یمنی یہودی استعمال کرتے ہیں۔

ملائشیاترميم

غیر قانونی - ملائشیا۔

سعودی عربترميم

غیر قانونی - سعودی عرب۔[9]

يمنترميم

قانونی - يمن۔<[4]

یورپترميم

فنلینڈترميم

غیر قانونی [10]

فرانسترميم

ممنوع [11]

جرمنیترميم

غیر قانونی

آئس لینڈترميم

غیر قانونی .[12][13]

جمہوریہ آئرلینڈترميم

ممنوع

نیدرلینڈزترميم

غیر قانونی [14][15][16]

ناروےترميم

غیر قانونی [17]

پولینڈترميم

غیر قانونی [18]

برطانیہترميم

غیر قانونی [19][20][21][22][23][24][25][26][27][28][29][30][31][32]

شمالی امریکاترميم

کینیڈاترميم

غیر قانونی [33][34][35]

ریاستہائے متحدہ امریکاترميم

ممنوع [36] [37][38][39]

جنوبی امریکاترميم

جنوبی امریکا میں قات کے بارے میں کوئی قانون نہیں ہے

اوقیانوسیہترميم

آسٹریلیاترميم

قات کی درآمد کو کسٹم کے تحت کنٹرول کیا جاتا ہے۔ انفرادی صارفین کے لیے اجازت نامہ حاصل کرنا ضروری ہے۔[40][41][42][43]

حوالہ جاتترميم

  1. Dickens، Charles (1856) [Digitized February 19, 2010]. "The Orsons of East Africa". Household Words: A Weekly Journal, Volume 14. Bradbury & Evans. صفحہ 176. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 09 جنوری 2014.    (Free eBook)
  2. Al-Mugahed، Leen (2008). "Khat Chewing in Yemen: Turning over a New Leaf: Khat Chewing Is on the Rise in Yemen, Raising Concerns about the Health and Social Consequences". Bulletin of the World Health Organization 86 (10): 741–2. doi:10.2471/BLT.08.011008. PMID 18949206. PMC 2649518. http://www.questia.com/library/journal/1G1-188738635/khat-chewing-in-yemen-turning-over-a-new-leaf-khat۔ اخذ کردہ بتاریخ 9 January 2014. 
  3. "World Health Organization Expert Committee on Dependence-producing Drugs: Fourteenth Report". United Nations Office of Drugs and Crime. |archive-url= بحاجة لـ |archive-date= (معاونت) میں اصل سے آرکائیو شدہ. 
  4. ^ ا ب پ "Haight-Ashbury Free Medical Clinic". Journal of psychoactive drugs (Haight-Ashbury Publications) 41: 3. 2009.
  5. Thomson Gale (Firm), Countries of the World and Their Leaders Yearbook 2007, Volume 1, (Thomson Gale: 2006), p.545.
  6. "SAPTA - Khat". |archive-url= بحاجة لـ |archive-date= (معاونت) میں اصل سے آرکائیو شدہ. 
  7. "Protected Trees". Department of Water Affairs and Forestry, Republic of South Africa. 3 May 2013.
  8. "Visitors Please Do Not Carry Khat into چین". May 4, 2014. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. 
  9. "Khat (catha edulis)". Ekhat. اخذ شدہ بتاریخ 29 جون 2013. 
  10. "Khat use on the increase in Finland". HELSINGIN SANOMAT. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 23 مئی 2011. 
  11. Drugs.com (1 January 2007). "Complete Khat Info". Jump up ^ Giannini, A.J.; Castellani, S. (July 1982). "A manic-like psychosis due to khat (Catha edulis Forsk.)". Journal of Toxicology. Clinical Toxicology 19 (5): 455–9. doi:10.3109/15563658208992500. PMID 7175990
  12. "Hald lagt á fíkniefnið Khat í fyrsta sinn" (بزبان الآيسلندية). 2010-08-19. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. 
  13. "60 kíló af fíkniefnum" (بزبان الآيسلندية). 2011-05-18. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. 
  14. "khat" (بزبان الهولندية). Infopolitie.nl. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 02 اپریل 2010. 
  15. "Qat niet verboden" (بزبان الهولندية). DePers.nl. اخذ شدہ بتاریخ 02 اپریل 2010. 
  16. "Kabinet verbiedt qat" (بزبان الهولندية). Nu.nl. 10 January 2012. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 10 جنوری 2012. 
  17. "NOVA paper 1/06". 16 March 2007. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. 
  18. "Dz.U. 2009 nr 63 poz. 520". [مردہ ربط]
  19. Klein، Axel (2007). "Khat and the creation of tradition in the Somali diaspora" (PDF). In Fountain، Jane؛ Korf، Dirk J. Drugs in Society: European Perspectives. Oxford: Radcliffe Publishing. صفحات 51–61. ISBN 978-1-84619-093-3. 
  20. Warfa، N.; Klein، A.; Bhui، K.; Leavey، G.; Craig، T.; Alfred Stansfeld، S. (2007). "Khat use and mental illness: A critical review". Social Science & Medicine 65 (2): 309–318. doi:10.1016/j.socscimed.2007.04.038. PMID 17544193. 
  21. Warsi، Sayeeda (15 June 2008). "Conservatives will ban khat". Comment is free. London: The Guardian. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2010. 
  22. "Where we stand: Community relations". Conservatives.com. Conservative Party. |archive-url= بحاجة لـ |archive-date= (معاونت) میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2010. 
  23. "Call for new controls on legal drug khat". Sky News. 19 June 2010. 26 Jan 2014 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 جنوری 2014. 
  24. "Hansard 11 Jan 2012". Hansard. 11 January 2012. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 12 جنوری 2012. 
  25. "Khat: A review of its potential harms to the individual and communities in the UK" (PDF). Advisory Council on the Misuse of Drugs. 23 January 2013. 
  26. "Written statement to Parliament: Khat". HM Government. 3 July 2013. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. 
  27. "Herbal stimulant khat to be banned". BBC News. 3 July 2013. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. 
  28. "BBC News - Khat: What impact will UK herb stimulant ban have?". BBC News. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 24 جنوری 2014. 
  29. "YouTube - Khat Power: The Latest War On Drugs". Youtube.com. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 24 جنوری 2014. 
  30. "BBC News - Don't make khat a class-C drug, MPs urge government". bbc.co.uk. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 03 اپریل 2014. 
  31. "BBC News - Kenya appeals to UK not to ban khat". bbc.co.uk. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 03 اپریل 2014. 
  32. "UK legislators to press for lifting ban on Miraa Read". Standard Digital. 7 March 2014. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 17 مارچ 2014. 
  33. "Controlled Drugs and Substances Act". Laws.justice.gc.ca. 29 March 2010. اخذ شدہ بتاریخ 04 اپریل 2010. [مردہ ربط]
  34. "Gangs infiltrate Canada's airports". The Christian Science Monitor. 16 December 2008. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 02 اپریل 2010. 
  35. Powell، Betsy (20 April 2012). "Woman who brought khat to Canada wins appeal". The Star. 2014-01-09 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 جنوری 2014. 
  36. "Erowid Khat Vault : Law : Federal Register vol 58, no 9". Erowid.org. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 02 اپریل 2010. 
  37. "Import Alert 66-23" (Press release). Food and Drug Administration. 2011-03-18. مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 2014-01-26.  Check date values in: |archive-date= (معاونت)
  38. Federal Register (14 January 1993). "Schedules of Controlled Substances: Placement of Cathinone and 2,5-Dimethoxy-4-ethylamphetamine Into Schedule I". 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 01 فروری 2010.  [توضیح درکار(citation makes no sense)]
  39. "Section 195-017 Substances, how placed in schedules-li". Moga.mo.gov. 28 August 2009. اخذ شدہ بتاریخ 02 اپریل 2010. 
  40. Stewart، Cameron (23 July 2008). "Somali women demand government action on legal drug". The Australian. اخذ شدہ بتاریخ 05 اگست 2008. 
  41. "Guidance for completing Licence and Import Permit applications (Khat)" (PDF). Department of Health and Ageing, Commonwealth of Australia. May 2008. 26 دسمبر 2018 میں اصل (PDF) سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 05 اگست 2008. 
  42. "Austlii Consolidated Acts – DRUGS MISUSE REGULATION 1987(Qld) – SCHEDULE 2". Austlii.edu.au. اخذ شدہ بتاریخ 04 اپریل 2010. 
  43. "Associate Professor Heather Douglas, University of Queensland". Law.uq.edu.au. 9 December 2009. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 04 اپریل 2010.