قیصرا شہراز برطانوی پاکستانی ناول نگار ، اسکرپٹ رائٹر ، کالج انسپکٹر ، ٹیچر ٹرینر، ایجوکیشن کنسلٹنٹ اور فری لانس جرنلسٹ ہیں۔ وہ رائل سوسائٹی آف آرٹس کی فیلو اور گیٹ ہاؤس کتب کی سابقہ ​​ڈائریکٹر ہیں ، جو طلبہ کی مہارت برائے زندگی کی کلاسوں کے لیے لکھی ہوئی کتابیں شائع کررہیں ہیں۔ انہوں نے برٹش کونسل کے توسط سے پاکستان اور ہندوستان میں "کوالٹی ان ایجوکیشن" کے بارے میں متعدد ورکشاپس اور تربیتی سیشنز کی میزبانی کی ہے۔ ان کا کام زیادہ تر نسلی ، صنف اور ثقافتی تفریق کے پہلوؤں کی تلاش میں بنی نوع انسان کی تنوع پر مرکوز ہے۔ 2016 میں انہوں نے لیورپول کے اینجلیکن کیتھیڈرل میں منعقدہ قومی تنوع ایوارڈ میں لائف ٹائم اچیور ایوارڈ جیتا [1] `

قیصرا شہراز
معلومات شخصیت
پیدائش 30 مئی 1958 (63 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
گجرات  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Pakistan.svg پاکستان  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ مصنفہ  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ابتدائی زندگیترميم

قیصرا شہراز 1958 میں پاکستان میں پیدا ہوئیں اور ان کی پرورش انگلینڈ میں ہوئی۔ وہ نو سال کی عمر سے مانچسٹر میں مقیم ہے۔ انھوں نے یورپی ادب اور اسکرین رائٹنگ میں ماسٹر ڈگری حاصل کی ہے۔ [2] انہوں نے لنکاسٹر یونیورسٹی کے مشیر ہونے کے ساتھ ساتھ کالج انسپکٹر اور ایک صحافی کے طور پر بھی کام کیا ہے۔

کیریئرترميم

شہراز کہتی ہیں کہ وہ بنیادی طور پر خواتین کی تفریح ​​کے لیے لکھتی ہیں۔ وہ بنیادی طور پر مغربی معاشروں میں رہنے والی مسلمان خواتین کے بارے میں لکھتی ہیں۔ [3] قیصرہ شہراز کو ٹائمز سمیت مختلف رسائل اور اخبارات میں بھی شائع کیا گیا ہے۔ اصل میں انہوں نے مختصر کہانیوں پر توجہ دی ، لیکن طویل کام لکھنے میں بھی اپنا لوہا منوایا۔۔ ان کا ناول دی ہولی ویمن متعدد ممالک اور زبانوں میں شائع ہوا۔ انہوں نے ایک ڈراما سیریل 'دل ہی سے ہے' لکھا جو پاکستان ٹیلی ویژن (پی ٹی وی) پہنچا اور اسے دو ایوارڈ ملےان کی ابتدائی تخلیق ، "جینز کی ایک جوڑی" 1988 میں برطانیہ میں شائع ہوئی تھی۔ اس میں لباس ، خواتین کی شائستگی ، متعدد شناختوں اور ثقافتی جھڑپوں کے معاملے کی تحقیق کی گئی ہے۔ ان کی کتاب "ای پِیر آف جینز" بارہ بار شائع ہوچکی ہے

ناولترميم

ہولی وومین (2002)

ٹائفون (2007)

بغاوت (2013)

حوالہ جاتترميم

  1. Qaisra Shahraz. Lancs.ac.uk.
  2. Indonesians in Focus: Qaisra Shahraz – Indonesian News – Indonesia, Indonesian News, Literature آرکائیو شدہ [Date missing] بذریعہ planetmole.org [Error: unknown archive URL]. Planet Mole (4 February 2008).
  3. "The Holy and The Unholy:Critical Essays on Qaisra Shahraz's Fiction by Abdur Raheem Kidwai | 2940015302226 | NOOK Book (eBook) | Barnes & Noble". Barnesandnoble.com. اخذ شدہ بتاریخ 06 جنوری 2014.