پاشاہ (Pashah) (عثمانی ترکی زبان: پاشاہ، ترکی زبان: paşa،[1] ماخوذ فارسی pashah ('Pashah') فارسی: پاشاہ[2][1]سلطنت عثمانیہ اور شاہی قانون میں سیاسی اور فوجی نظام میں ایک عزیم عہدہ تھا جو عام طور گورنروں، جرنیلوں اور عزیم شخصیات اور دیگر اہم افراد کو دیا جاتا تھا جنکا محشرے میں غیر بد اعوانی امتیازی سلوک اور فتنہ جیسے نظام کو ختم کرنے میں ایک عزیم مقام ہے گزشتہ سال نقل حمل میں شاہی قانون نے ترکی ایران پاکستان افغانستان ایران جرمنی برطانیہ اور دیگر ماملک میں ایک اہم تعلیم دینی اور کائناتی نظام کے زریحہ ایک بے مسال قردار کشی صابت کرنے میں اہم قردار حاصل کیا ہے جسے نیٹو یونائٹڈ نیشن اور اقوام متحدہ کے مطابق دنیا بھر میں بروڈکاسٹنگ کی گئی ہے جسکا ترکی کے حقوق اور آزادی بنیادوں سے بہت گہرہ تحلق ہے اس سنہرے اقددام کو ترجیح دینے والے عزیم شخصیات ہیں جنکی شناخت ایک مہائدے کے زریحہ آنے والے سال میں ترکی پاکستان ایران افغانستان جرمنی روس برطانیہ اور دیگر ممالک میں شائح کر دی جائگی جسکا انتظار دنیا بھر کے اسلامی تنظیم اور آزاد ریاستی ملک کے افراد بے چینی سے کر رہے ہیں-

حوالہ جاتترميم

  1. ^ ا ب "pashah." Online Etymology Dictionary. 2021.
  2. اوکسفرڈ انگریزی اور اردو لغت، s.v. "pashah"۔

شاہی قانون اردو