کلثوم ہزارہ (پیدائش: 4 ستمبر 1988ء) ایک پاکستانی کراٹے کھلاڑی ہیں۔[1][2] .

کلثوم ہزارہ
کلثوم ہزارہ
معلومات شخصیت
تاریخ پیدائش 4 ستمبر 1988ء
قومیت پاکستان
پیشہ پاکستانی کراٹے کھلاڑی
کھیل کراٹے  ویکی ڈیٹا پر (P641) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

پس منظرترميم

کلثوم، کا تعلق کوئٹہ ، بلوچستان کی ہزارہ برادری سے۔ وہ چار بہن بھائیوں میں سب سے چھوٹی ہیں۔ انھوں نے اپنی والدہ کو دو سال کی عمر میں کینسر کی وجہ سے کھو دیا اور نو سال کی عمر میں ان کے والد کو دل کا دورہ پڑا۔ والد کے انتقال پر، ان کی سب سے بڑی بہن، فاطمہ اور ان کی کزن اور بہنوئی، سرور علی ان کے سرپرست بن گئے۔ 2000 میں، اپنے آبائی شہر میں فرقہ وارانہ تشدد کی وجہ سے، وہ کراچی شفٹ ہوگئیں۔ 2003 میں ان کے بہنوئی کی وفات، تکلیف دہ ثابت ہوئی ، جس نے کلثوم کی زندگی کو بدل دیا۔

پیشہ ورانہ زندگیترميم

کلثوم کے والد نے انھیں سرور علی کی سرپرستی میں چلنے والے کراٹے کلب میں داخل کرایا، جب وہ پانچ سال کی تھیں۔

قومی کھیلترميم

واپڈا کا رخ کرنے سے پہلے کلثوم ابتدا میں پاک فوج کی نمائندگی کرتی تھیں۔ انھوں نے 2005 میں قومی سطح کا پہلا سونے کا تمغہ جیتا تھا۔ ان کی شاندار کارناموں کے سبب، ہزارہ کو 2017 میں 'آئیکون آف دی نیشن' ایوارڈ ملا۔[3]

بین اقوامی کھیلترميم

انھوں نے پہلی بار 2005 میں تہران میں منعقد کئے جانے والے، چوتھے "خواتین اسلامی کھیلوں" میں پاکستان کی نمائندگی کی جس میں وہ پانچویں نمبر پر آئیں۔ 2010 میں، انھوں نے بنگلہ دیش کے شہر ڈھاکہ میں منعقدہ ساؤتھ ایشین گیمز میں اپنے پہلے دو تمغے جو کانسی کے تھے، جیتے۔ 2012 میں، وہ ایشین چیمپئین شپ کے لئے بھیجی جانے والی پہلی خواتین ٹیم کا حصہ تھیں، جو ازبکستان کے شہر تاشقند میں منعقد کی گئیں۔[4] بھارت کی نئی دہلی میں منعقدہ 2016 کی جنوبی ایشین کراٹے چیمپیئن شپ میں، انھوں نے دو تمغے جیتے: ایک سونے اور چاندی کا۔ [5]

کولمبو، سری لنکا میں منعقدہ 2017 میں، چیمپیئن شپ میں، -68 کلو کے مقابلے میں میں انہوں نے ایک کانسی اور ایک سونے کا تمغہ جیتا۔[6] 68 کلو کے مقابلے میں فائنل میں انھوں نے اپنے حریف کو 10 پوائنٹس سے 2 پوائنٹس سے شکست دے کر اپنے اعزاز کا دفاع کیا۔ 2018 میں، انہوں نے انڈونیشیا کے جکارتہ میں منعقدہ ایشین گیمز میں حصہ لیا۔ نیپال کے شہر کھٹمنڈو میں 2019 جنوبی ایشین گیمز میں، کلثوم نے ٹیم کمائٹ ایونٹ میں طلائی تمغہ اور -68 کلو کے مقابلے میں میں چاندی کا تمغہ جیتا تھا۔ [7]

مقابلےترميم

کلثوم نے نے درج ذیل بین الاقوامی مقابلوں میں حصہ لیا ہے:

  • چوتھا اسلامی خواتین کھیل 2005، تہران، ایران
  • دسواں جنوبی ایشین گیمز 2006، کولمبو، سری لنکا
  • گیارویں ویں جنوبی ایشین گیمز 2010، ڈھاکہ، بنگلہ دیش
  • گیارھویں ویں سینئر کیڈٹ اے کے ایف (ایشین) چیمپینشپ 2012، تاشقند، ازبکستان
  • ستارہو واں ایشین گیمز 2014، انچیون، جنوبی کوریا
  • تیسری جنوبی ایشین کراٹے چیمپیئنشپ، نئی دہلی، ہندوستان
  • چوتھی ساؤتھ ایشین کراٹے چیمپیئنشپ 2017، کولمبو، سری لنکا
  • چوتھا اسلامی یکجہتی کھیل 2017، باکو، آذربائیجان
  • کراٹے 1 پریمیر لیگ 2017، دبئی، متحدہ عرب امارات
  • 15 ویں اے کے ایف سینئر چیمپیئنشپ 2018، عمان، اردن
  • 18 ویں ایشین گیمز 2018، جکارتہ، انڈونیشیا
  • کراٹے اے ون سیریز 2018، شنگھائی، چین
  • 13 ویں جنوبی ایشین گیمز 2019، کھٹمنڈو، نیپال

فلمترميم

2018 میں ، شرمین عبید چنائے نے کلثوم کے نام کے عنوان سے "کلثوم ہزارہ - کراٹے ونڈر" کے بارے میں ایک مختصر فلم بنائی۔

  1. "A brief story of Pakistan's Karate superstar Kulsoom Hazara". MM News TV (بزبان انگریزی). 2019-12-31. اخذ شدہ بتاریخ 16 نومبر 2020. 
  2. Khan، Muhammad Asif (2019-12-22). "KARATE: THE FIGHTING SPIRIT". DAWN.COM (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 16 نومبر 2020. 
  3. Adil، Hafsa. "'Role model': Pakistan's Hazara woman packing a punch". www.aljazeera.com (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 16 نومبر 2020. 
  4. "When deaths, unhappy relatives failed to bring Kulsoom down". The Express Tribune (بزبان انگریزی). 2012-07-10. اخذ شدہ بتاریخ 16 نومبر 2020. 
  5. "Pakistan Karate Federation (Pakistan Olympic Association)". nocpakistan.org. اخذ شدہ بتاریخ 16 نومبر 2020. 
  6. "Karate star Kulsoom wants women to follow her example". The Express Tribune (بزبان انگریزی). 2017-11-13. اخذ شدہ بتاریخ 16 نومبر 2020. 
  7. "Karate". South Asian Games Nepal 2019 (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 16 نومبر 2020.