کرنل کولن میکنزی سی بی (1754–8 مئی 1821) برطانوی ایسٹ انڈیا کمپنی میں سکاٹش فوجی افسر تھے جو بعد میں ہندوستان کے پہلے سرویئر جنرل بنے ۔ وہ نوادرات جمع کرنے والے اور مستشرق تھے۔ انہوں نے جنوبی ہندوستان کا سروے کیا جس میں ابتدا میں ذاتی دلچسپی سے اور بعد میں بطور سرویئرمذہب، زبانی تاریخ، نوشتہ جات اور دیگر شواہد کا مطالعہ کرنے کے لیے مقامی مترجمین اور اسکالرز کا استعمال کیا، ۔ انہیں 1799 میں ٹیپو سلطان پر برطانوی فتح کے فوراً بعد میسور کے علاقے کا سروے کرنے کا حکم دیا گیا تھا اور انہوں نے اس خطے کے پہلے نقشے تیار کیے تھے جس کے ساتھ زمین کی تزئین کی تصویریں اور آثار قدیمہ کے نشانات پر نوٹ بھی تھے۔ ان کے ہزاروں مخطوطات، نوشتہ جات، تراجم، سکے اور پینٹنگز پر مشتمل ان کے مجموعے، جو انڈیا آفس لائبریری نے ان کی موت کے بعد حاصل کیے تھے ہندوستانی تاریخ کے مطالعہ کا ایک اہم ذریعہ ہیں۔ انہیں 4 جون 1815 کو کمپینین آف دی آرڈر آف دی باتھ سے نوازا گیا [1]

ابتدائی زندگیترميم

 
تھامس ہکی کی پینٹنگ سے اخذ شدہ

انڈیاترميم

میسور سروےترميم

 
میکنزی کا جنوبی ہندوستان کا نقشہ (1808)

امراوتیترميم

 
مدگری اور امراوتی میں نوشتہ جات (1809)

جاواترميم

سرویئر جنرل آف انڈیاترميم

وفات اور اس کے بعدترميم

حوالہ جاتترميم

  1. East-India Register and Directory. W.H. Allen. 1819. صفحہ 71.