جمشید نسروانجی مہتا (پیدائش:7 جنوری، 1886ء - وفات :8 اگست، 1952ء) پاکستان سے تعلق رکھنے والے معروف سماجی کارکن، سیاستدان، کراچی کے پہلے منتخب میئر اور کراچی کے معمار تھے۔[1]

جمشید نسروانجی
کراچی میونسپل کمیٹی صدر
مدت منصب
اپریل 1922ء – اکتوبر 1933ء
کراچی میونسپل کارپوریشن میئر
مدت منصب
1933ء – 1934ء
معلومات شخصیت
تاریخ پیدائش 7 جنوری 1886  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تاریخ وفات 1 اگست 1952 (66 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مذہب پارسی
عملی زندگی
پیشہ سیاست دان  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

حالات زندگیترميم

جمشید نسروانجی 7 جنوری، 1886ء کو کراچی، برطانوی ہندوستان (موجودہ پاکستان) میں پیدا ہوئے۔ انہوں نے ابتدائی تعلیم پارسی ربادی اسکول اور این جے وی اسکول کراچی سے حاصل کی اور پھر 1900ء میں مزید تعلیم کے لیے ڈی جے کالج کراچی میں داخل ہوئے۔ وہ 1914ء میں کراچی میونسپلٹی کے رکن بنے اور 1933ء تک اس کے رکن رہے۔ اس دوران 1922ء سے 1933ء تک گیارہ سال تک مسلسل کراچی میونسپل کمیٹی کے صدر اور پھر کراچی میونسپل کارپوریشن کے 1933ء سے 1934ء پہلے میئر منتخب ہوئے[1]۔ انہوں نے اپنی میئرشپ کے زمانے میں کراچی کی توسیع کے متعدد منصوبے بنائے۔ کھلی سڑکیں، باغات اور کھیلوں کے میدان تعمیر کروائے[2]۔ 1919ء میں جب انفلوائنزا کی بیماری نے کراچی میں وبا کی شکل اختیار کی تو انہوں نے دن رات عوام کی خدمت کی جس کے نتیجے میں وہ عوام میں بے حد مقبول ہوئے۔۔[3]

وفاتترميم

جمشید نسروانجی مہتا8 اگست، 1952ء کو کراچی، پاکستان میں وفات پاگئے۔[1][2]

حوالہ جاتترميم

  1. ^ ا ب پ جمشید نصروانجی : جدید کراچی کے معمار، روزنامہ ڈان کراچی، 6 اگست 2011ء
  2. ^ ا ب ص 74، پاکستان کرونیکل، عقیل عباس جعفری، ورثہ / فضلی سنز، کراچی، 2010ء
  3. "جمشید نسروانجی کون تھے". ڈان اردو.