"آیا صوفیہ" کے نسخوں کے درمیان فرق

1,935 بائٹ کا اضافہ ،  2 مہینے پہلے
(ٹیگ: ترمیم از موبائل موبائل ویب ترمیم ایڈوانسڈ موبائل ترمیم)
(ٹیگ: ترمیم از موبائل موبائل ویب ترمیم ایڈوانسڈ موبائل ترمیم)
== ایا صوفیہ میوزیم ==
ایا صوفیہ کی عمارت [[فتح قسطنطنیہ]] کے بعد سے 481 سال تک تک مسجد اور مسلمانوں کی عبادت گاہ رہی۔ لیکن [[سلطنت عثمانیہ کا خاتمہ]] کے بعد جب [[مصطفی کمال اتاترک]] [[ترکی]] کا سربراہ بنا، تو اس نے اس مسجد میں نماز بند کر کے اسے میوزیم (عجائب گھر، نمائش گاہ) بنا دیا۔ اور تا حال یہ نمائش گاہ ہے۔
 
== مسجد بحالی کا مطالبہ ==
31 مئی 2014ء کو ترکی کی "نوجوانان اناطولیہ" نامی ایک تنظیم نے مسجد کے میدان میں فجر کی نماز کی مہم چلائی جو ایا صوفیہ کو مسجد بحالی کے مطالبے پر مبنی تھی۔<ref>[http://www.almokhtsar.com/news/رفع-الأذان-وأداء-صلاة-الفجر-بمسجد-آيا-صوفيا-في-تركيا-بعد-غياب-78-عامًا-وأصوات-التكبير-تعلو رفع الأذان وأداء صلاة الفجر بمسجد "آيا صوفيا" في تركيا بعد غياب 78 عامًا.. وأصوات التكبير تعلو فرحًا "فيديو"]، مختصر الأخبار، نر في 31 مايو 2014، دخل في 13 سبتمبر 2014 {{Webarchive|url=https://web.archive.org/web/20141019113703/http://www.almokhtsar.com:80/news/رفع-الأذان-وأداء-صلاة-الفجر-بمسجد-آيا-صوفيا-في-تركيا-بعد-غياب-78-عامًا-وأصوات-التكبير-تعلو |date=19 أكتوبر 2014}}</ref> اس تنظیم کا کہنا تھا کہ انھوں نے دیڑھ کروڑ لوگوں کی تائیدی دستخطوں کو جمع کیا ہے۔<ref>[http://www.aljazeera.net/news/cultureandart/2014/5/31/آمال-تركية-بإعادة-متحف-أيا-صوفيا-لمسجد آمال تركية بإعادة متحف أيا صوفيا لمسجد]، الجزيرة.نت، نشر في 31 مايو 2014، دخل في 13 سبتمبر 2014 {{Webarchive|url=https://web.archive.org/web/20181025044247/http://www.aljazeera.net:80/news/cultureandart/2014/5/31/آمال-تركية-بإعادة-متحف-أيا-صوفيا-لمسجد |date=25 أكتوبر 2018}}</ref> لیکن اس وقت کے وزیر اعظم کے مشیر نے بیان دیا کہ اب ایا صوفیہ کو مسجد میں بحال کرنے کا کوئی ارادہ نہیں ہے۔
 
== نگار خانہ ==