دھندیراج کویند پھالکے (مراٹھی: धुंडीराज गोविंद फाळके)، مشہور بطور دادا صاحب پھالکے (مراٹھی: दादासाहेब फाळके) (اس آڈیو کے متعلق تلفظ ) (30 اپریل 1870 – 16 فروری 1944)، ایک ہندوستانی فلم ساز، ہدایت کار و فلمی لکھاری تھے، پھالکے صاحب بابائے بھارتی سنیما کہلاتے ہیں۔[1][2][3] پھالکے صاحب کی پہلی فلم راجہ ہریش چندر تھی جو 1913ء میں بنائی، جسے اب ہندوستان کی پہلی مکمل فلم کے طور پر جانا جاتا ہے، پھالکے نے 1937ء تک اپنے 19 سالہ دور میں کل 95 فلمیں اور 26 مختصر فلمیں بنائیں، جن میں: موہنی بھاسمسور (1913)، ستیہ وان ساوتری (1914)، Lanka Dahan (1917)، شری کرشنا جنمہ (1918) اور کلیہ مردان (1919) شامل ہیں۔[4]

دادا صاحب پھالکے
दादासाहेब फाळके
Phalke.jpg

معلومات شخصیت
پیدائش 30 اپریل 1870
Tryambakeshwar، بمبئی پریزیڈنسی، برطانوی ہندوستان
وفات 16 فروری 1944(1944-20-16) (عمر  73 سال)
ناسک، ممبئی، برطانوی ہندوستان
شہریت British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی سر جے جے اسکول آف آرٹ
پیشہ فلم ہدایت کار، تخلیق کار، فلم لکھاری
دور فعالیت 1913–1937
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحات  ویکی ڈیٹا پر (P345) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

مزید دیکھیےترميم

حوالہ جاتترميم

  1. Dadasaheb Phalke, the father of Indian cinema – Bāpū Vāṭave, National Book Trust – Google Books. Books.google.co.in. اخذ شدہ بتاریخ 17 نومبر 2012. 
  2. Sachin Sharma, TNN 28 جون 2012, 03.36AM IST (28 جون 2012). "Godhra forgets its days spent with Dadasaheb Phalke – Times of India". Articles.timesofindia.indiatimes.com. اخذ شدہ بتاریخ 17 نومبر 2012. 
  3. Vilanilam، J. V. (2005). Mass Communication in India: A Sociological Perspective. New Delhi: Sage Publications. صفحہ 128. ISBN 81-7829-515-6. 

مزید پڑھیےترميم

بیرونی روابطترميم