زمین کے گرد، قمری مدار پر شمالاً جنوباً قاطع نقاط عقدتین کہلاتے ہیں۔ جہاں جنوبی نقطہ ذنب کے نام سے معروف ہے، سنسکرت میں اسے ’’کیتو‘‘ کہتے ہیں۔ گو کہ یہ کوکب نہیں اس کے باوجود ہندی علم نجوم اسے اہم کوکب کی حیثیت حاصل ہے۔ قدیم ہندوستانی اساطیر میں راس و ذنب کو سماوی اژدھے سے تشبیہ دی گئی ہے۔ ذنب اس اژدھے کا دھڑ ہے، لہذا آنکھوں سے محروم ہے اور کسی کوکب پر ناظر نہیں ہو سکتا۔ ذنب کو خواہشات سے مبرا، عارف اور گیانی مانا گیا ہے۔

ذنب یا کیتو نحس کوکب ہے، مگر عطارد کی مانند ممتزج ہے۔ جس برج میں جس کوکب کے ہمراہ ہوں اس کا اثر قبول کرلیتا ہے۔ ذنب اگر باقوت ہو تو مولود کو پاکیزہ باطن، فیاض اور حساس طبع عطا کرتا ہے۔ مابعدالطبیعیات اور تصوف میں دلچسپی دیتا ہے۔ اگر یہ زائچہ میں کمزور ہو یا ساقط گھروں میں نحس کواکب کے ہمنشین ہو تو اپنے دور میں مولود کو تجرد پسند، نشئی، گمنام، خود کش حملے پر مائل اور تارک الدنیا بناتا ہے۔

مراتب اور تعلقاتترميم

منسوباتترميم

  • جنس : مخنث
  • یوم : منگل
  • سمت : جنوب مغرب
  • رنگ : دھواں دار سیاہ
  • پتھر : لاجورد
  • دھات : زنگ آلود لوہا، مقناطیس
  • ذائقہ : بدبودار کسیلا
  • اعضا : نچلا نصف جسم
  • رشتہ : برادری اور عقیدے سے باہر کے افراد
  • پیشے : ماہر نفسیات، شراب اور منشیات کا کاروبار، خفیہ اداروں کے منصوبہ ساز، برآمدات

== بیرونی روابط==* بیرونی روابط برائے ہندی نجوم