اگر یہ آپ کا مطلوبہ صفحہ نہیں تو دیکھیے، کنپٹی اور temporal۔

زمانی کا لفظ اصل میں انگریزی لفظ temporal کے لیے استعمال ہوتا ہے اور اس سے مراد سائنسی مضامین میں کسی بھی ایسے مظہر یا وقوعہ کی لی جاتی ہے کہ جو فاصلی (spatial) نہیں ہو بلکہ زمانی (وقت سے مشروط) ہو یعنی یوں بھی کہہ سکتے ہیں کہ وہ مظہر جو بیک وقت ظاہر ہونے کی بجائے یکے بعد دیگرے ظاہر ہو رہا ہو۔

چاول اور مثالترميم

اس بات کی وضاحت کے لیے عام سے الفظ میں مثال یوں لی جاسکتی ہے کہ جیسے فرض کیجیئے کہ چاول کے دانوں کو کسی خاص بلندی سے گرا کر نیچے موجود کسی جالی سے گذارنا ہے ؛ تو اب ایسا دو طرح سے کیا جاسکتا ہے۔

  1. ایک تو یہ کہ چاولوں کو مٹھی میں لے کر جالی پر گرا دیا جائے اور اس طرح کوئی دانہ کسی سوراخ سے اور کوئی دانہ کسی سوراخ سے گذرتا ہوا جالی سے نکل جائے گا۔ یعنی اس کا مطلب یہ ہوا کہ چاول کے دانے ایک فاصلے یا جگہ یا فضاء (room) پر پھیل کر جالی کے مختلف سوراخوں سے ایک ساتھ گزر جائیں گے اور ایسے مظہر کو سائنس میں spatial phenomenon کہا جاتا ہے، جیسے عصبونات میں واقع ہونے والا فضائی تراکم (spatial summation) کا عمل۔
  2. دوسری صورت یہ ہوسکتی ہے کہ چاولوں کے ایک ایک دانے کو چٹکی سے یکے بعد دیگرے باری باری ایک سیدھ میں گرایا جائے اور اس طرح چاول کے تمام دانے باری باری ایک ہی سوراخ سے گزر کر جالی سے نکلیں گے یعنی ایسی صورت میں وہ پہلی صورت کے برخلاف، فضاء یا room پر پھیل کر جالی سے گذرنے کی بجائے ایک ہی مقام سے جالی سے گذرتے ہیں اور جس کے لیے یہ عمل، وقت سے مشروط ہو جاتا ہے اور زمانی کہلاتا ہے، جیسے زمانی تراکم (temporal summation) کا مظہر۔