عظیم دہشت (روسی: Большой террор) جس کو ییژوف​ راج (روسی: ежовщина، یژووشچینا) بھی کہا جاتا ہے، سوویت یونین میں سن 1937–38 میں جوزف سٹالن کی طرف سے چلایا سیاسی دہشت اور قتلوں کا ایک دور تھا۔ اس میں سٹالن نے پورے سوویت سماج میں بہت سارے کمیونسٹ پارٹی لیڈروں ، سرکاری نوکروں، کسانوں، سرخ فوج کے اہل کاروں اور کئی لوگوں کو پھڑ کر مروا دیا تھا۔ اکثر اس پر تے غدار ہونے یا گڑبڑی کرنے کا الزام لگایا جاتا تھا۔ ساتھ ہی ساتھ پورے سوویت یونین میں عام شہریوں پر زبردست پولیس کی نگرانی ، ہلکہ شک پر بھی لوگوں کو جیل ، عام شہریوں کو ایک - دوسرے پر نظر رکھنے کے لئے اکسانے اور من مانے ڈھنگ سے لوگوں کو مارنے جیسی کاریاوائیوں بھی چلتی رہیں ۔ اس زمانے میں سوویت خفیہ پولیس کا سربراہ نکولائی ییژوف​ ( Никола́й Ежо́в ، Nikolai Yezhov) ، تھا ، اسلئے اس وقت کو بعد کے سوویت اور روسی تاریخ دان ییژوف​ راج کے نام نال بھی جانتے ہیں ۔

قتلوں کی تعدادترميم

سوویت دستاویزوں کے مطابق 1937–38 کے دور میں ( Народный комиссариат внутренних дел ، داخلہ امور کی عوامی کمیساریت ، سوویت خفیہ پولیس ) نے 15،48،366 لوگوں کو گرفتار کیا ، جن میں 6،81،692 کو گولی مار کر موت کے گھاٹ اتارا گیا ۔ یعنی روز 1،000 لوگوں کا قتل کیا گیا ۔ بہت سارے لوگوں کو گولاگ کی سخت​ جیلوں میں بھی رکھا گیا تھا اور اکثر یہ لوگ چھوٹنے کے بعد دم توڑ دیا کرتے تھے۔ اک اندازا کے مطابق اس دو سالوں میں 9.5 لاکھ سے 12 لاکھ لوگوں کی موت ہوئی ۔

یہ بھی ویکھیںترميم

حوالہ جاتترميم