قصبہ گرہ دار چیز کے تعین کا پیمانہ و معیار ہے۔

لغوی معنیترميم

ہر وہ نبات جس کے تنے میں گ رہیں اور پورے ہوں قصبہ کہلاتا ہے اس کی جمع قصبات ہے[1]

اصطلاحی معنیترميم

اس کی لمبائی چھ ذراع کے برابر ہے یہی صحیح ہے اور بعض ہر 10 ذراع کو ایک قصبہ کہتے ہیں دس قصبہ کو ایک اشل کہتے ہیں

پیمائشترميم

قصبہ جریب کا جزو ہے 10×10 قصبات ایک جریب ہوتا ہے۔

شرعی استعمالترميم

فقہا کے ہاں قصبہ جریب کا جزو ہے اور ذراع سے دو چند ہے اور اسی کو ذراع کا معیار قرار دیتے ہیں[2]

حوالہ جاتترميم

  1. المصباح المنیر
  2. موسوعہ فقہیہ ،جلد38 صفحہ 340، وزارت اوقاف کویت، اسلامک فقہ اکیڈمی انڈیا