لال چند (1 جون، 1960 - 31 جولائی، 2020) ایک سیاست دان، تاجر، فلاحی کارکن اور پاکستان کی سندھ اسمبلی کے سابق رکن تھے۔ [1] [2] ان کا انتقال 31 جولائی 2020 کو دبئی میں اپنے گھر میں نامعلوم وجوہات کی بنا پر ہوا۔

لال چند (سیاستدان)
 

معلومات شخصیت
تاریخ پیدائش سنہ 1960ء   ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تاریخ وفات سنہ 2020ء (59–60 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی مہران یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی   ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ابتدائی زندگی

ترمیم

چاند یکم جون 1960 کو سندھ کے تعلقہ بھٹورو کے مضافات میں ایک ہندو گھرانے میں پیدا ہوئے۔ ابتدائی تعلیم اپنے آبائی ضلع ٹھٹھہ سے حاصل کی۔ انھوں نے مہران یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی جامشورو سے سول انجینئری میں گریجویشن کیا۔ لال چند نے اپنے کیریئر کے ابتدائی مرحلے میں اپنے والد کے کاروبار کو آگے بڑھایا۔ 1985 میں فارغ التحصیل ہونے کے بعد وہ سب انجینئر اور پھر مہران یونیورسٹی میں لیکچرار کے طور پر تعینات ہوئے۔ [3]

سیاسی کیریئر

ترمیم

انھوں نے پاکستان پیپلز پارٹی کی حکومت کے دوران 2008-2013 تک پاکستان کی صوبائی اسمبلی سندھ میں بطور رکن خدمات انجام دیں۔ اپنے دور میں لال چند نے اقلیتی امور کی قائمہ کمیٹی کے رکن کے ساتھ ساتھ ایس جی اے اور سی ڈی پر قائمہ کمیٹی کے رکن کے طور پر کام کیا۔ پاکستان میں اپنی سیاسی زندگی کو چھوڑ کر وہ قبرص چلے گئے اور بعد میں ایل سی ویل کی بنیاد رکھی، جو دبئی اور برطانیہ میں ایک غیر منافع بخش تنظیم ہے جس کا مقصد فلاح و بہبود کو فروغ دینا ہے۔ [2]

حوالہ جات

ترمیم
  1. Suchitra Steven Samuel۔ "LC Well DMCC promotes an attitude of gratitude"۔ Khaleej Times۔ اخذ شدہ بتاریخ 08 جولا‎ئی 2019 
  2. ^ ا ب "Welcome to the Website of Provincial Assembly of Sindh"۔ www.pas.gov.pk۔ اخذ شدہ بتاریخ 08 جولا‎ئی 2019 
  3. "Lal Chand: Once a poor Pakistani boy, now a billionaire in UAE"