محمد بن علی راوندی

محمد بن علی راوندی ایک فارسی مورخ تھے جس نے عظیم سلجوق سلطنت کے خاتمے اور اس کے بعد خارارزمین سلطنت کے حملے کے دوران راحت الصدور نام کی تاریخی کتاب کو لکها۔[2]

محمد بن علی راوندی
معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1202 (عمر 818–819 سال)[1]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Iran.svg ایران  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ خطاط،  شاعر،  مؤرخ  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان فارسی  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

جدید دورترميم

1921 میں، راحت الصدور کتاب کو علامہ محمد اقبال نے شائع کیا۔[3] اس کتاب کو اقبال ، ایڈورڈ جی براؤن (Edward G. Browne) اور مرزا محمد قزوینی نے دوسری تحریروں میں بطور ماخذ جمال التوریخ، میر قند کی راحت الصفا اور حمد اللہ المصطفی کی تاریخ گوزیدہ میں حوالہ کے طور پر تسلیم کیا گیا ہے۔[3]

حوالہ جاتترميم

  1. وی آئی اے ایف - آئی ڈی: https://viaf.org/viaf/311109818/ — اخذ شدہ بتاریخ: 25 مئی 2018 — مصنف: او سی ایل سی — ناشر: او سی ایل سی
  2. The encyclopaedia of Islam. Gibb, H. A. R. (Hamilton Alexander Rosskeen), 1895-1971., Bearman, P. J. (Peri J.) (ایڈیشن New edition). Leiden: Brill. 1960–2009. صفحات pp. 460. ISBN 90-04-16121-X. OCLC 399624. 
  3. ^ ا ب The History of the Seljuq Turks: from the Jāmi al-Tawārīkh : an Ilkhanid Adaptation of the Saljuq nama, Transl. Kenneth Allin Luther, Ed. C.E. Bosworth, (Curzon Press, 2001), 15.