مقبرہ عیسی خان

شیر شاہ سوری کے دربار کے پٹھان عہدے دار امیر عیسی خان نیازی کا مقبرہ

شیر شاہ سوری کے دربار کے پٹھان عہدے دار امیر عیسی خان نیازی کا مقبرہ بھارت کے شہر دہلی میں مغل تاجدار ہمایوں کے مقبرے کے احاطے میں واقع ہے۔مزار کی سرخ ریتلے پتھر کی ہشت پہلو عمارت شیر شاہ سوری کے عہد میں 1547-1548 کے دوران تعمیر کی گئی تھی۔مسجد عیسی خان مزار کی مغربی سمت یونیسکو کی جانب سے بین الاقوامی ثقافتی ورثہ قرار دیے گئے ہمایوں کے مزار اور اس کے احاطے میں موجود دیگر عمارتوں کے ساتھ واقع ہے۔

مقبرہ عیسی خان
Isha Khan Niyazi's tomb - Delhi 297 HT.jpg
مقبرہ عیسی خان نیازی
مقاماندرون احاطہ مقبرہ ہمایوں, دہلی, بھارت
متناسقات28°35′32″N 77°14′46″E / 28.5922°N 77.2462°E / 28.5922; 77.2462متناسقات: 28°35′32″N 77°14′46″E / 28.5922°N 77.2462°E / 28.5922; 77.2462
تعمیر1547–1548
قسمثقافتی
معیار(ii), (iv)
نامزد کردہ1993 (17th عالمی ثقافتی ورثہ کمیٹی)
حصہمقبرہ ہمایوں
Regionبھارت

تاریخترميم

شیر شاہ سوری اور اس کے بیٹے اسلام شاہ سوری کے دربار کی معزز شخصیت عیسی خان نیازی کے مدفن کی عمارت مقبرہ ہمایوں کے احاطے میں بو حلیمہ باغ کے جنوب میں واقع ہے۔[1]مقبرے پر لگی الواح پر اس کا عرصہ تعمیر 1547 تا 1548 سن عیسوی کندہ ہے۔ اس پر “پناہ بہشت” اور یہ بھی تحریر ہے کہ یہ شیرشاہ کے عہد میں تعمیر کیا گیا تھا۔مزار کے مغرب میں واقع مسجد 1547 میں تعمیر کی گئی تھی۔

طرز تعمیرترميم

مقبرہترميم

عیسی خان کے مقبرے کا طرز تعمیر لودھی معماری کا نمونہ ہے۔ مقبرے کی عمارت پست چبوترے پر ہشت پہلو ہے جو لودھی طرز تعمیر کا طرہ امتیاز تھا۔مرکزی عمارت کے اطراف ایک برآمدہ ہے اور ہر پہلو پر تین محرابیں ہیں جن کے اوپر چھجے بنے ہیں۔اس مقبرے کا طرز تعمیر مبارک شاہ، محمد شاہ، خانِ جہاں تلنگانی اور سکندر لودھی کے مقابر جیسا ہے۔ آغا خان ٹرسٹ برائے ثقافت نے 2011 سے 2015 تک آرکیالوجیکل سروے آف انڈیا کے ساتھ مل کر اس مقبرے کی تعمیر نو اور بحالی کا کام کیا تھا۔[2]

مسجدترميم

مسجد عیسی خان کا مرکزی گنبد پرانے قلعے میں واقع مسجد قلعہ کہنہ کے گنبد جیسا ہے۔اطراف کے گنبد ستونوں پر اٹھائے گئے ہیں اور خیمہ سے مشابہت رکھتے ہیں۔مسجد کا مرکزی دالان تین حصوں میں منقسم ہے۔ مسجد کا مرکزی دالان سرخ ریتلے پتھر سے بنایا گیا ہے جبکہ اطرافی دالانوں میں بھورے رنگ کا پتھر استعمال کیا گیا ہے۔

حوالہ جاتترميم

  1. Ranjan Kumar Singh (2016). The Islamic Monuments of India. Partridge Publishing. ISBN 9781482873146. 
  2. http://www.nizamuddinrenewal.org/conservation/isa-khan/