ژین جین یا ژینجین (انگریزی: Zhenjin; چینی: 真金; منگولی: Чингим/Chingim) قبلائی خان کا دوسرا بیٹا اور یوآن خاندان کا بانی تھا۔ قبلائی خان نے اسے 1273ء میں ولی عہد مقرر کیا۔

ژین جین
معلومات شخصیت
تاریخ پیدائش سنہ 1243  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تاریخ وفات 5 جنوری 1286 (42–43 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت یوآن خاندان  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اولاد نسل
والد قبلائی خان  ویکی ڈیٹا پر (P22) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والدہ چابی  ویکی ڈیٹا پر (P25) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
خاندان بورجگین  ویکی ڈیٹا پر (P53) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دیگر معلومات
پیشہ سیاست دان  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

تاریخ یوآن کے مطابق ژین جین کی موت کثرت مے نوشی تھی تاہم خیال کیا جاتا ہے کہ صرف کثرت مے نوشی اس کی موت کا اصل سبب نہیں تھی۔ ایسا کہا جاتا ہے کہ اس کی موت سے کچھ عرصہ قبل دربار کے کچھ وزرا قبلائی خان کو سن رسیدہ ہونے کی وجہ سے معزول کر کے اسے خان (بادشاہ) بنانا چاہتے تھے کیونکہ اس کا سلطنت میں بہت احترام کیا جاتا تھا۔ تاہم شہزادہ ژین جین نے ایسا کرنے سے روکنے کی کوشش کی۔

بدقسمتی سے قبلائی خان کو اس بات کا پتہ چل گیا اور وہ بہت غصہ ہوا، جس کی وجہ سے ژین جین نے انتہائی خوفزدگی کے عالم میں زیادہ شراب پینا شروع کر دی جو اس کی موت کا سبب بنی۔ اس کی موت کت بعد قبلائی خان نے ژین جین کے بیٹے تیمور خان کو ولی عہد مقرر کیا جو 1294ء میں شہنشاہ بنا۔


حوالہ جاتترميم