حمید جہلمی جہلم(پنجاب)، پاکستان مشہورصحافی اور ادیب ہیں۔

حمید جہلمی
ادیب
پیدائشی نامعبد الحمید
قلمی نامحمید جہلمی
ولادتجہلم
ابتداجہلم، پاکستان
وفات4 مئی2012ء جہلم (پنجاب)
اصناف ادبشاعری
ذیلی اصنافغزل، نعت
تعداد تصانیفچار
تصنیف اولسپنوں کی موت
تصنیف آخرسامراج کے مقابل
معروف تصانیفسپنوں کی موت، سامراج کے مقابل ، طالبان،اسلام،تیل اور وسط ایشیا میں سازشوں کا نیا کھیل
ویب سائٹ/ آفیشل ویب سائٹ

پیدائشترميم

جہلم میں پیدا ہوئے ان کا اصل نام عبد الحمید تھا انہیں احمد ندیم قاسمی نے حمید جہلمی کا نام دیا کیونکہ ان کا تعلق جہلم سے تھا ہر کوئی انہیں جہلمی کے نام سے مخاطب کرتا تھا۔

صحافتی سفرترميم

ان کا صحافتی سفر مولانا ظفر علی خان کے اخبار زمیندار سے ہوا جب میاں افتخار الدین نے روزنامہ امروز 1948ء میں جاری کیا تو یہاں آ گئے پہلے سب ایڈیٹر بعد میں اسسٹنٹ ایڈیٹر بن گئے چیف ایڈیٹر کے عہدے سے ریٹائر ہوئے،کئی سال تک پس منظر کے نام سے کالم لکھتے رہے کچھ عرصہ روزنامہ پاکستان میں بھی رہے۔

وفاتترميم

4 مئی 2012ء جہلم (پنجاب) – پاکستان میں فوت ہوئے۔

مجموعہ کلامترميم

  • سپنوں کی موت
  • سامراج کے مقابل ۔، مترجم، لاہور،مشعل۔ 2001ء،
  • طالبان،اسلام،تیل اور وسط ایشیا میں سازشوں کا نیا کھیل۔ احمد رشید،حمید جہلمی،مترجم،لاہور،مشعل۔ 2001ء، 332 ص [1]

حوالہ جاتترميم