روجھان صوبہ پنجاب پاکستان کی جنوب میں آخری تحصیل کا شہر ہے۔آبادی کے لحاظ سے ضلع راجن پور کی سب سے چھوٹی تحصیل روجھان کا ہیڈ کوارٹر بھی اسی شہر میں ہے۔ سابق نگران وزیراعظم میر بلخ شیر مزاری کا آبائی شہر ہے اس شہر کو "خیموں کا شہر" بھی کہا جاتا ہے ــ یہ شہر اپنے ضلعی ہیڈ کوارٹر راجن پور سے 70 کلو میٹر جنوب میں واقع ہے.اس کا قریب ترین شہر کوٹ مٹھن ہے.یہ علاقہ پنجاب کا پسماندہ ترین علاقہ ہے،

روجھان
ملکFlag of Pakistan.svg پاکستان
صوبہپنجاب
ضلعراجن پور
شہر کی بنیادنامعلوم
آبادی
 • کلنہ معلوم
منطقۂ وقتپاکستان کا معیاری وقت (UTC+5)
رمز ڈاکنہ معلوم
رقبہنہ معلوم

شرح خوانگیترميم

شرح خواندگی مایوس کن ہے۔ سابق وزیراعظم کے آبائی علاقے میں شرح خواندگی صرف گیارہ فیصد ہے ۔ نئے سکولوں کے قیام سے شرح تعلیم بڑھنے کی امید ہے۔

معیشتترميم

معیشت کا انحصار زراعت اور مویشیوں پر ہے۔

بلدیاتی انتخابات 2015ترميم

2012ء میں روجھان کو میونسپل کادرجہ ملا اور از سر نو حلقہ بندیاں ہوئیں۔شہر کو بارہ بلاکس میں تقسیم کر دیا گیا۔ 5دسمبر 2015ء میں ہونے والے بلدیاتی انتخاب میں پاکستان مسلم لیگ ن اور پاکستان تحریک انصاف کے چھ چھ نمائندگان منتخب ہوئے۔

قبائلی حیثیتترميم

مزاری قبیلہ، بلوچ قبائل کی ایک شاخ ہے۔اورسردار میر بلخ شیر مزاری اس قبیلے کے تمن ہیں۔ روجھان شہر ان کا آبائی شہر ہے۔ اس لحاظ سےمزاری قبائل میں اس شہر کو مرکزی حیثیت حاصل ہے۔ مزاری قبیلہ نے جب خانہ بدوشی کی زندگی ترک کر کے پہاڑوں سے میدانی علاقوں میں سکونت اختیار کرنا شروع کی، تو روجھان ہی ان کا پہلا پڑاؤ تھا۔

مزید دیکھیےترميم

حوالہ جاتترميم