شعیرہ جَو کا دانہ یہ چوڑائی کے لحاظ سے لمبائی کا پیمانہ اور وزن اور ثقل کے لحاظ سے اوزان کا پیمانہ و معیار ہے۔

لغوی معنیترميم

شعیرہ شعیر کا واحدہے ترگھاس کی قبیل سے سردیوں میں دانے دار چارے والا پودا ہے یہ غذا میں گندم سے کم حیثیت کا ہے[1]

اصطلاحی معنیترميم

درمیانے درجے کا جوکی چوڑائی کو شعیرہ کہا جاتا ہے جب اس کا پیٹ دوسر جو کی پشت سے لگا ہو یہ انگلی کا پیمانہ ہے اس کی مقدار فقہا کے نزدیک خچر کے 6 بالوں کی چوڑائی ہے[2]

بطور پیمانہترميم

جو درہم ،مثقال اور قیراط کا پیمانہ ہے اور مراد اوسط درجے کا جو ہے جس کے دونوں کنارے کاٹ دیے گئے ہوں شرعی درہم کے قیراط میں پانچ دانوں کا اعتبار ہے

شرعی استعمالترميم

فقہا کے ہاں براہ راست استعمال نہیں البتہ اوزان اور لمبائیوں کے لیے اسے معیار قرار دیتے ہیں اس میں غذائی اور مالی قیمت والا عنصر رکھتا ہے کھیتی کی زکوۃ صدقہ فطر اور نفقہ میں اس کا ذکر ملتا ہے[3]

حوالہ جاتترميم

  1. المعجم الوسیط
  2. فتاوی شامی
  3. موسوعہ فقہیہ ،جلد38 صفحہ 340، وزارت اوقاف کویت، اسلامک فقہ اکیڈمی انڈیا