صبغت اللہ مجددی

سابق صدر افغانستان

صبغت اللہ مجددی  (21 اپریل 1926ء – 11 فروری 2019ء) ایک افغانی سیاست دان تھے ، محمد نجیب اللہ کی حکومت کے زوال کے بعد، اپریل 1992ء[4][5][6] کو افغانستان کے نگراں صدر بنے، پھر انھوں نے افغانیوں کی آزادی کے لیے ایک جماعت جبہہ نجات ملی بنائی۔ سنہ 2003ء میں لویہ جرگہ کے صدر بنے، اسی جرگے نے آگے چل کر افغانستان کے نئے دستور کی منظوری دی۔

صبغت اللہ مجددی
(پشتو میں: صبغت الله مجددي ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
 

مناصب
صدر افغانستان   ویکی ڈیٹا پر (P39) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
برسر عہدہ
28 اپریل 1992  – 28 جون 1992 
عبدالرحیم ہاتف  
برہان الدین ربانی  
اسپیکر مشرانو جرگہ   ویکی ڈیٹا پر (P39) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
برسر عہدہ
دسمبر 2005  – 29 جنوری 2011 
 
فضل ہادی مسلمیار  
معلومات شخصیت
پیدائش 21 اپریل 1925ء [1]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کابل   ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 11 فروری 2019ء (94 سال)[2]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کابل [3]  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت مملکت افغانستان (1926–1973)
جمہوریہ افغانستان (1973–1978)
دولت اسلامی افغانستان (1992–2002)
اسلامی امارت افغانستان (1996–2001)
افغانستان
جمہوری جمہوریہ افغانستان (1978–1992)  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ الازہر
حبییہ ہائی اسکول   ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ سیاست دان ،  استاد جامعہ   ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان پشتو ،  عربی   ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ملازمت جامعہ کابل   ویکی ڈیٹا پر (P108) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

سنہ 2005ء میں مشرانو جرگہ کے صدر مقرر ہوئے اور سنہ 2011ء میں رکن کے طور پر دوبارہ منتخب ہوئے۔ انھوں نے افغان ہائی پیس کونسل میں بھی خدمات سر انجام دیں۔ مجددی ایک معتدل مسلم لیڈر خیال کیے جاتے ہیں۔[7]

حوالہ جات

ترمیم
  1. Former Interim President Sibghatullah Mujaddedi Passes Away — شائع شدہ از: 12 فروری 2019 — اقتباس: Sibghatullah Mojaddedi was born on 21 April 1925
  2. https://www.munzinger.de/search/go/document.jsp?id=00000020281
  3. https://tribune.com.pk/story/1908902/3-former-afghan-president-sibghatullah-mojaddedi-passes-away/
  4. "Former Afghan President Survives Bomb, Blames Pakistan"۔ RadioFreeEurope/RadioLiberty۔ 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 27 مارچ 2018 
  5. Harro Ranter (29 مئی 1992)۔ "ASN Aircraft accident Tupolev 154M YA-TAP Kabul"۔ 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 27 مارچ 2018 
  6. "Mojadedi announces the establishment of a new political council"۔ 27 اگست 2015۔ 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 27 مارچ 2018 
  7. Gladstone 2001, p. 8