فیروزہ بیگم (اداکارہ)

فیروزہ بیگم یہودی ہندوستانی اداکارہ تھیں۔ فیروزہ نے بالی ووڈ اور مالی ووڈ کی متعدد فلموں میں کام کیا۔ [1]

فیروزہ بیگم 1920 اور 1930 کی دہائی میں "بہت زیادہ" مقبول تھیں۔ [2] اگرچہ اس وقت بہت ساری یہودی اداکارائیں تھیں ، وہ روبی مائرز اور ایسٹر وکٹوریہ ابراہیم (پرامیلا) جیسی دیگر قابل ذکر اداکاروں کے ساتھ کھڑی تھیں۔ [3] [4] [5]

وہ بنی اسرائیل ورثے کی حامل تھیں۔ پیدائشی نام سوسن سلیمان ، انھوں نے اپنے یہودی نسب کو چھپانے کے لئے مسلم نام فیروزہ بیگم استعمال کیا [6]۔

(ہندوستان میں یہودیوں کی تاریخ ملاحظہ کریں)

وہ ان پانچ مشہور یہودی اداکاراؤں میں سے ایک تھیں جنھیں دستاویزی فلم میں نمایاں دکھایا گیا؛ شالوم بالی ووڈ: یہودیوں اور بالی ووڈ کی ان کہی کہانی۔ ڈینی بین موشے نے 2013 میں اس دستاویزی فلم کو ریلیز کیا تھا۔ [7]

فلمی گرافیترميم

  • بے وفا قتل
  • پریم ویر
  • دن رات
  • رائےگڈ
  • بھاگتا بھوت
  • سرکس گرل
  • نورِ یمن (1935)
  • آنسو ؤں کی دنیا (1936)
  • بھارت کا لال (1936)

حوالہ جاتترميم

  1. IndiaGlitz - Jews, the lost tribe of Indian Cinema (SPECIAL) - Bollywood Movie News
  2. Ginsburg، Aimee (17 April 2006). "From Bollywood to the Sands of Jerusalem". The Jerusalem Report. 
  3. Dev، Atul (21 September 2013). "The untold story of Jews in Indian cinema". The Sunday Guardian. New Delhi. 
  4. Somaaya، Bhawana؛ Kothari، Jigna؛ Madangarli، Supriya (2013). Mother Maiden Mistress Women in Hindi Cinema, 1950-2010. New Delhi: Harper Collins. ISBN 9789350294857. 
  5. Kirshner (30 August 2013). "Bollywood's Untold Story". اخذ شدہ بتاریخ 28 جون 2016. 
  6. "Jewish women were Indian cinema's first actresses". thenewsminute.com. اخذ شدہ بتاریخ 27 جون 2016. 
  7. "Shalom Bollywood file at Library of Congress Apr 18 shows Jews' key roles". examiner.com. Examiner.com Entertainment. اخذ شدہ بتاریخ 27 جون 2016. [مردہ ربط]