قطب الدین راوندی

شیعہ عالم، محدث، مفسر، متکلم، فلسفی اور محقق۔

کام جاری

قطب الدین راوندی
Sheikh Ghotbeddin Qom.jpg
 

معلومات شخصیت
مقام پیدائش کاشان  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات سنہ 1178  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
قم  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Iran.svg ایران  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ عالم،  مفسر،  محقق،  محدث،  شاعر،  مصنف  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
P islam.svg باب اسلام

قطب الدین راوندی (وفات: 573ھ مطابق 1178ء) شیعی عالم، محدث، فقیہ، متکلم، مفسر، فلسفی اور مؤرخ تھے۔ وہ شیخ طبرسی کے شاگردوں میں سے تھے۔ راوندی کثیرالتصانیف تھے جن میں سے اُن کی وجہ ٔ شہرت الخرائج و الجرائح ہے۔ ابن شہر آشوب ماژندرانی اور منتجب الدین رازی اُن کے نامور شہرت یافتہ شاگرد ہو گزرے ہیں۔

سوانحترميم

پیدائش اور نام و کنیتترميم

راوندی کا زمانہ پیدائش معلوم نہیں ہو سکا اور نہ اِس کا ثبوت اُن کے معاصرین کے بیانات میں یا آراء میں ہی ملتا ہے۔ البتہ وہ کاشان کے ایک قصبہ رَاوند میں پیدا ہوئے تھے اور اِسی نسبت سے راوندی مشہور ہوئے۔[1] آفندی اصفہانی کے قول کے مطابق: ’’ اُن کا نام زیادہ تر ان کے جد یعنی سعید بن ہبۃ اللہ سے انتساب کی وجہ سے پہچانا جاتا ہے‘‘۔[2] کنیت  ابو الحسن اور ابوالحسین بھی بیان کی گئی ہے۔[3]

مزید دیکھیےترميم

حوالہ جاتترميم

  1. محسن امین: اعیان الشیعہ، جلد 7، صفحہ 239۔ مطبوعہ بیروت، 1421ھ۔
  2. عبداللہ آفندی اصفہانی: ریاض العلماء، جلد 2، صفحہ 419۔ مطبوعہ قم۔
  3. محسن امین: اعیان الشیعہ، جلد 7، صفحہ 239۔ مطبوعہ بیروت، 1421ھ۔