موسیٰ جاوید چوہان

موسی جاوید چوہان (انگریزی: Musa Javed Chohan)(پیدائش: 30 مئ، 1948؛ پنڈ دادن خان، پاکستان) کینیڈا میں پاکستان کے صفیر ہیں۔ وہ فرانس میں پاکستان کے صابق صفیر اور یونیسکو (UNESCO) میں پاکستان کے نمائندے تھے۔ اس کے علاوہ وہ ملائیشیا میں بھی پاکستان کے صفیر رہہ چکے ہیں۔ انہوں نے فرانس اور پاکستان کے درمیان دو طرفہ تعلقات میں مثبت تبدیلیاں انجام دیں، جس کی وجہ سے فرانس کے صابق صدر جاک شیراک نے انہیں Ordre National du Mérite بھی دیا۔

موسی جاوید چوہان، 1974ء

تعلیمترميم

موسی جاوید چوہان نے درج ذیل ماسٹرز ڈیگریز کیے ہیں:

  • International Relations & Diplomacy
  • English Literature
  • History
  • Defense & Strategic Studies
  • Political Science

انہوں نے تعلیم گورنمنٹ کالج لاہور اور The Fletcher School of Law and Diplomacy سے حاصل کی۔

عہدہترميم

2001-2003ء موسی جاوید چوہان فرانس میں پاکستان کے صفیر تھے اور یونیسکو میں پاکستان کے نمائدے۔ 1997-2001ء وہ ملائیشیا میں پاکستانی صفیر رہے۔ اس سے پہلے انہوں نے کئی ممالک میں پاکستان کی نمائندگی کی جن میں اسکاٹ لینڈ، گنی اور ایران شامل ہیں۔ انہوں نے پاکستان کے اقوام متحدہ میشن میں 1986-1989ء شرکت کی۔

انہوں نے پاکستان کے دفتر خارجہ میں ملازمت 1971ء میں شروع کی اور اعلی عہدہ سنبھالے مثلآ:

  • Special Secretary Foreign Affairs
  • Director-General South Asia
  • Director-General Americas
  • Director-General Foreign Minister's Office
  • Director General Foreign Service Academy
  • Director Foreign Secretary's Office
  • Director Afghanistan

فل وقتترميم

فل وقت موسی جاوید چوہان کینیڈا میں پاکستان کے ہائ کمیشنر ہیں۔ اس کے علاوہ وہ وینیزویلا، گیانا اور ٹرینیڈاڈ میں بھی پاکستان کے نمائندے ہیں۔

متفرقہترميم

موسی جاوید چوہان نے اپنی شائری کی انگریزی میں کتاب لکھی ہے جس کا نام Barricaded Self ہے۔

بیرونی روابطترميم