نیوکلیئر میگنیٹک ریزوننس

نیوکلیئر میگنیٹک ریزوننس (Nuclear magnetic resonance) یا NMR سے مراد وہ طبیعی مظہر ہے جس میں مقناطیسی میدان میں موجود ایٹمی مرکزے برقناطیسی اشعاع جذب اور خارج کرتے ہیں۔ عام طور پر خارج شدہ شعاعیں 60 سے لے کر 1000 میگا ہرٹز تک کی ہوتی ہیں یعنی ٹیلی ویژن کے VHF اور UHF کے بینڈ پر ہوتی ہیں۔ مخصوص حالات کے تحت مختلف ایٹمی مرکزے مختلف فریکوئینسی کی ریڈیو ویو خارج کرتے ہیں۔

برمنگھم میں موجود 21.2 ٹیسلا کی طاقت کا ایک NMR مقناطیس۔ اتنے طاقتور مقناطیسی میدان میں ہائیڈروجن1 سے 900MHz کی لہریں خارج ہوتی ہیں جبکہ زمین کے مقناطیسی میدان میں ہائیڈروجن سے خارج ہونے والی لہریں صرف دو کلو ہرٹز کی ہوتی ہیں۔

نیوکلیئر میگنیٹک ریزوننس طب کے میدان میں بڑی کثرت سے استعمال ہوتی ہے اور مقناطیسی اصدائی تصویرہ کہلاتی ہے۔

مزید دیکھیے ترمیم

  یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کر کے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔