گلیلیو گلیلی

اطالوی ماہر فلکیات، ماہر طبیعیات اور انجینئر (1564-1642)

گلیلیو گلیلی 15 فروری 1564ء میں اطالیہ کے علاقے تسکانی کے شہر پیزا میں پیدا ہوا۔ گالی لیو پر ریاست میں بدعت پھیلانے کا الزام عائد کیا گیا۔ اپنے خیالات و تحقیقات کے ذریعے اطالوی سرزمین پر خدا کے معاملات میں بے جا مداخلت کے سبب قاضی القضاء نے گالی لیو کو مذہبی تصورات کو مسخ کرنے کا ذمہ دار ٹھہرایا اور حکم دیا کہ وہ عوام الناس کی موجودی میں معافی کی خواستگاری کرے۔ اپنے زمانے کے اس سائنس دان علم طبیعیات کے جد امجد اور دوربین جیسی کمال شے کے ایجاد کنندہ کو مجمع عام میں معافی مانگنی پڑی۔ 1642 میں اندھے پن کی حالت میں اس عظیم انسان کی موت واقع ہوئی جسے آج کی سائنسی دنیا اور اطالوی لوگ اپنا محسن اور ہیرو گردانتے ہیں۔

گلیلیو گلیلی
(اطالوی میں: Galileo Galilei ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
 

معلومات شخصیت
پیدائشی نام (اطالوی میں: Galileo di Vincenzo Bonaiuti de' Galilei ویکی ڈیٹا پر (P1477) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیدائش 15 فروری 1564ء [1][2][3][4]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیسا [2][5][6]  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 8 جنوری 1642ء (78 سال)[1][7][8][9][10][11][12]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رہائش پیسا
پادووا
فلورنس   ویکی ڈیٹا پر (P551) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مذہب لاطینی کلیسیا [13]  ویکی ڈیٹا پر (P140) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عارضہ اندھا پن (1638–)  ویکی ڈیٹا پر (P1050) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ ماہر فلکیات [14][15][3][16]،  فلسفی [14][3]،  ریاضی دان [14][3][4]،  طبیعیات دان [14][17][16]،  موجد ،  منجم ،  جامع العلوم ،  استاد جامعہ [4]،  سائنس دان [18][19][3]،  انجینئر ،  فلسفی [16]  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان لاطینی زبان ،  اطالوی [20][21]  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شعبۂ عمل فلکیات ،  طبیعیات ،  میکانیات ،  فلسفہ ،  ریاضی [4]  ویکی ڈیٹا پر (P101) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
الزام و سزا
جرم بدعت فی: 1633)  ویکی ڈیٹا پر (P1399) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دستخط
 

تعارف ترمیم

گلیلیو (انگریزی: Galileo) ایک اطالوی ماہر فلکیات اور فلسفی تھا۔ سائنسی انقلاب پیدا کرنے میں گالی لیو کا کردار اہم ہے۔ وہ شاقول اور دوربین كا نامور موجد ہے- گالی لیو نے اشیا کی حرکات، دوربین، فلکیات کے بارے میں بیش قیمت معلومات فراہم کیں۔ اسے جدید طبیعیات کا باپ کہا جاتا ہے۔

وفات ترمیم

گلیلیو اپنى عمر كے آخرى حصے ميں اندھا رہا اور اس نے 8 جنوری 1642ء میں وفات پائی۔

حوالہ جات ترمیم

  1. ^ ا ب ربط : https://d-nb.info/gnd/118537229  — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اپریل 2014 — اجازت نامہ: CC0
  2. ^ ا ب http://www-history.mcs.st-andrews.ac.uk/Biographies/Galileo.html
  3. ^ ا ب BeWeb person ID: https://www.beweb.chiesacattolica.it/persone/persona/1337/ — اخذ شدہ بتاریخ: 13 فروری 2021
  4. ^ ا ب پ پی ایم سی آئی ڈی: https://www.ncbi.nlm.nih.gov/pmc/articles/PMC2564400https://www.ncbi.nlm.nih.gov/pmc/articles/PMC2564400
  5. ربط : https://d-nb.info/gnd/118537229  — اخذ شدہ بتاریخ: 10 دسمبر 2014 — اجازت نامہ: CC0
  6. ربط : https://d-nb.info/gnd/118537229  — اخذ شدہ بتاریخ: 25 فروری 2017 — مدیر: الیکزینڈر پروکورو — عنوان : Большая советская энциклопедия — اشاعت سوم — باب: Галилей Галилео
  7. ربط : https://d-nb.info/gnd/118537229  — مصنف: ارتھر بری — عنوان : A Short History of Astronomy — ناشر: جون مرے
  8. بی این ایف - آئی ڈی: https://catalogue.bnf.fr/ark:/12148/cb11903931b — اخذ شدہ بتاریخ: 26 جون 2020 — مصنف: فرانس کا قومی کتب خانہ — عنوان : اوپن ڈیٹا پلیٹ فارم — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  9. بی این ایف - آئی ڈی: https://catalogue.bnf.fr/ark:/12148/cb11903931b — اخذ شدہ بتاریخ: 22 اگست 2017
  10. ایس این اے سی آرک آئی ڈی: https://snaccooperative.org/ark:/99166/w6833x7s — بنام: Galileo Galilei — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  11. فائنڈ اے گریو میموریل شناخت کنندہ: https://www.findagrave.com/memorial/1899 — بنام: Galileo Galilei — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  12. Internet Speculative Fiction Database author ID: https://www.isfdb.org/cgi-bin/ea.cgi?157256 — بنام: Galileo Galilei — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  13. After 350 Years, Vatican Says Galileo Was Right: It Moves — شائع شدہ از: 31 اکتوبر 1992
  14. ربط : https://d-nb.info/gnd/118537229  — اخذ شدہ بتاریخ: 24 جون 2015 — اجازت نامہ: CC0
  15. ربط : https://d-nb.info/gnd/118537229  — صفحہ: 31
  16. https://cs.isabart.org/person/64242 — اخذ شدہ بتاریخ: 1 اپریل 2021
  17. http://www.infoplease.com/biography/science-mathematicians.html
  18. http://www.nytimes.com/2003/08/12/science/12ESSA.html
  19. http://www.nytimes.com/2009/06/02/science/02essay.html?pagewanted=all
  20. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb11903931b — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — مصنف: فرانس کا قومی کتب خانہ — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  21. کونر آئی ڈی: https://plus.cobiss.net/cobiss/si/sl/conor/18815587