گھی صاف مکھن سے بنایا جاتا ہے جو بر صغیر میں زمانۂ قدیم سے خوراک کے حصّہ کے طور پر مستعمل ہے۔ مکھن کو گرم کرنے کے بعد گھی بنایا جاتا ہے۔

گھی

بازاری حیثیتترميم

بھارت میں گھی کی منڈی 10،000 کروڑ [1] یا 2016ء تک 1.5 بلین امریکی ڈالر ہے۔ بھارت دنیا کا سب سے بڑا بھینسوں اور گائے کا دودھ؛ پیدا کرنے والا ملک ہے اور اس کے نتیجہ میں بھارت؛ گھی کا سب سے بڑا پیداواری اور صارف بھی ہے۔[2][3]

پاکستان میں گھی اور تیل کی سالانہ استعمال؛ پچاس لاکھ ٹن تک ہے، جب کہ غیر رسمی شعبے جیسے دیسی گھی ، سرسوں کا تیل وغیرہ کا حصہ تقریباً 400 چار لاکھ ٹن ہے۔ تاہم 300،000 ٹن تک گھی اور تیل زیادہ تر فوڈ انڈسٹری کے ذریعے کھایا جاتا ہے، جو غیر معیاری اور غیر خوردنی قسم کے خام مال سے بنایا جاتا ہے۔[4]

مزید دیکھیےترميم

  1. Jaffrey, Madhur (1982). Madhur Jaffrey's Indian Cooking, p. 211. London: BBC Books. آئی ایس بی این 0-8120-6548-4, cited in Wikipedia contributors. "Clarified butter." Wikipedia, The Free Encyclopedia. Wikipedia, The Free Encyclopedia, 10 Jul. 2013. Web. 10 Jul. 2013.
  2. "Milk in India: a popular refreshment, a huge business and a gift from the gods". Associated Press. 27 October 2015. اخذ شدہ بتاریخ 16 اگست 2020 – Fox News سے. 
  3. "Delhi's tax free budget: Desi ghee to cost less in Delhi". timesofindia-economictimes. اخذ شدہ بتاریخ 27 دسمبر 2015. 
  4. https://www.dawn.com/news/1601371%7CGovt urged to stabilise ghee, |vegetable oil prices by KALBE ALI Updated 14 Jan, 2021 09:02am