مرکزی مینیو کھولیں

ابراہیم عادل شاہ اول

سلطنت بیجاپور کا چوتھا حکمران جس نے 1534ء سے 1558ء تک حکومت کی۔

دور حکومت(1534.....1557)

ابراھیم عادل شاہ بزرگ
Adil Shahi Emperor
معیاد عہدہ 1534–1558
پیشرو Mallu Adil Shah
جانشین Ali Adil Shah I
شریک حیات Daughter of Asad Khan Lari (Khusrow)
نسل
  • Ismail
  • Ali Adil Shah I
  • Taham Asaf
  • Ahmed
  • Saani Bibi (wife of Ali Barid Shah)
  • Hadiya Sultana Wife of Murtuza Nizam Shah
مکمل نام
Sultan Abul Nasser Ibrahim Adil Shah
خاندان عثمانی خاندان
شاہی خاندان عادل شاہی خاندان
والد Ismail Adil Shah
والدہ Fatima Beebi
پیدائش بیجاپور
وفات 1558
بیجاپور
تدفین 1558In the campus of the Great تصوف بزرگ Chandah Husaini of Gogi, Shahpur, District گلبرگہ, next to his father and grandfather.
مذہب اہل سنت مسلمان

یوسف عادل شاہ (بانی عادل شاہی) کا چھوٹا بیٹا۔ اپنے بڑے بھائی اسماعیل عادل شاہ کی وفات پر اس کے نااہل بیٹے کو بیجاپور کے تخت سے اتار کر خود بادشاہ بن گیا۔ سنی مذہب کو سرکاری مذہب قرار دیا۔ ایرانی اور ترکی منصب داروں کی جگہ دکنی اور حبشی افسر مقرر کیے۔ ان برطرف شدہ افسروں کو وجے نگر کے راجا نے معقول منصب دے دیے۔ لیکن راجا کو خود معزول ہو کر ابراہیم کی مدد لینا پڑی۔ ابراہیم نے بھاری رقم لے کر معزول راجا کو وجیا نگر میں بحال کرایا۔ بیدر، احمد نگراور گولکنڈہ کی فوجوں کو شکستیں دیں۔ ہر طرف سے اطمینان حاصل کرکے ابراہیم نے عیش و نشاط کی طرف توجہ کی اور صحت برباد کر لی۔ اس کے عہد میں حکومت کے حسابات مراٹھی زبان میں تیار ہوتے تھے۔

حوالہ جاتترميم

  • وکیاتِ مملکتِ بیجاپور - بشیرالدین دہلوی۔ Wakiyate Mamlakate Bijapur by Basheeruddin Dehelvi.
  • Tareekhe Farishta by Kasim Farishta
  • External Relation of Bijapur Adil Shahis.