تحصیل کوٹ مومن ضلع سرگودھا، پنجاب، پاکستان کی پانچ تحصیلوں میں سے ایک تحصیل ہے۔[1]

21 جون 2003ء کو وزیرِ اعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الہی نے کوٹ مومن کو تحصیل کا درجہ دینے کا اعلان کیا۔ اس تحصیل کا صدر مقام کوٹ مومن ہے۔

محل وقوع اور آبادیترميم

کوٹ مومن سرگودھا سے 40 کلومیٹر کی دوری پر شمال مشرق کی جانب موٹروے ٹو (2) پر واقع ہے۔ اس کی کل آبادی پچاس ہزار جبکہ آبادی کی اکثریت مسلمان اور پنجابی بولنے والوں کی ہے۔ قلیل تعداد میں ہندو اور مسیحی بھی موجود ہیں۔ مین بازار میں ایک مندر ہے جو قیام پاکستان سے قبل تعمیر کیا گیا ہے۔

تعلیمترميم

لڑکیوں اور لڑکوں کے ڈگری کالجوں اور سرکاری سکولوں سمیت کئی ایک غیر سرکاری کالج اور سکول قائم ہیں جن میں دارالہدای سکول، دارارقم سکول، منہاج القرآن سکول، مپس سکول اور قمرالاسلام سکول بنگله گھله پور شامل ہیں۔ تعلیمی سہولیات کے فقدان کے باعث طلبہ بڑے شہروں کی طرف چلے جاتے ہیں۔

زراعتترميم

کوٹ مومن ایک زرعی علاقہ ہے جس کی معیشت کا دارومدار زراعت پر ہے۔ یہاں کی بڑی زرعی پیداوار کینو اور مالٹا ہے، جسے ایران، متحدہ عرب امارات، سعودی عرب، سری لنکا، جاپان اور کوریا میں بھجوایا جاتا ہے۔ یہاں پیدا ہونے والے خوش ذائقہ کینو اور مالٹا کی وجہ سے کوٹ مومن کو ’’ترش پھلوں کا شہر‘‘یا (City of Citrus) کہا جاتا ہے۔ دیگر فصلوں میں گندم، چاول، گنا اور مختلف قسم کی سبزیاں شامل ہیں۔

ضلع سرگودھا کی دیگر تحصیلیںترميم

مزید دیکھیےترميم

بیرونی روابطترميم

حوالہ جاتترميم

  1. "ضلع سرگودھا کی تحصیلیں اور یونین کونسلیں" (باللغة انگریزی). حکومت پاکستان.