دعوت اسلامی

ایک غیر سیاسی عالمی اسلامی تبلیغی جماعت

دعوتِ اسلامی پاکستان سے شروع ہونے والی بین الاقوامی اسلامی تبلیغی تنظیم ہے۔[1] دعوتِ اسلامی کی بنیاد محمد الیاس قادری نے 1981ء میں رکھی۔[2] تا حال دعوتِ اسلامی کے کارکنان دنیا کے کم و بیش 200 ممالک میں موجود ہیں۔[3] دعوتِ اسلامی 100 سے زائد شعبہ جات [4] میں اسلام کی خدمات سر انجام دے رہی ہے۔

دعوت اسلامی
Dawat-e-Islami.png
مقصد"مجھے اپنی اور ساری دنیا کے لوگوں کی اصلاح کی کوشش کرنی ہے، ان شاء اللہ عزوجل"
قیام1981
قسماسلامی اصلاحی تحریک
قانونی حیثیتفعال
صدر دفاترکراچی، پاکستان
مقام
  • محلہ سودا گران، پرانی سبزی منڈی، کراچی
ارکان
کوئی بھی سنی عقیدے کا حامل
باضابطہ زبان
اردو، عربی، انگریزی، ہندی، بنگلہ (بنیادی)
مزید تمام علاقائی زبانیں جہاں جہاں تنظیم کے لوگ موجود ہیں۔
امیر
محمد الیاس قادری
نگران شوری
عمران عطاری
کلیدی شخصیات
عبید رضا عطاری، عبد الحبیب عطاری، مفتی محمد قاسم قادری
ویب سائٹwww.dawateislami.net

آغاز

2 ستمبر 1981ء کو کراچی سے اس تحریک کا آغاز ہوا۔

تبلیغ اسلام

دعوت اسلامی 200 سے زائد ملکوں میں تادمِ تحریر کم و بیش 92‎ شعبہ جات میں تبلیغِ اسلام کا فریضہ سر انجام دے رہی ہے۔۔ غیر مسلموں میں تبلیغ کا بھی ایک پرامن طریقہ کار ہے۔ مَدَنی قَافِلے پاکستان اور دنیا بھر میں جاتے ہیں۔ علاقائی، تحصیل سطح، ڈویژن سطح، صوبائی سطح اور سالانہ بین الاقوامی اجتماعات منعقد کیے جاتے ہیں۔ دہشت گردی کے ممکنہ خطرات کے باعث 3 سال سے سالانہ اجتماع نہیں ہو سکا۔

مرکز

دعوت اسلامی کا مرکز کراچی پاکستان میں فیضان مدینہ کے نام سے ہے۔ اس کے علاوہ بھی پاکستان و دنیا بھر میں فیضان مدینہ کے نام سے ذیلی مراکز ہيں، جن کی تعداد روز بروز بڑھ رہی ہے۔

مقاصد

دعوت اسلامی کا منشور ہے کہ "مجھے اپنی اور ساری دنیا کے لوگوں کی اصلاح کی کوشش کرنی ہے۔[5] ذاتی اصلاح کے لیے دعوت اسلامی نے مدنی انعامات کے نام سے ایک پورا نظام پیش کیا گیا ہے، جس پر مکمل طور پر عمل کرنے سے ایک مسلمان کی ذاتی اصلاح ممکن ہو سکتی ہے۔ یہ مدنی انعامات مردوں کے لیے 72، عورتوں کے لیے 63، نابالغوں کے لیے 40 نکات پر مشتمل ہے۔ بانی تحریک نے ان کا مقصد بیان کیا ہے کہ:

مدنی کاموں میں ترقی، اخلاقی ترتیب، اور تقوی ملے، اس غرض سے میں نے مدنی انعامات کا سلسلہ شروع کیا اگرہم اخلاص کے ساتھ کوشش کریں تو ان مدنی انعامات پر عمل کر سکتے ہیں

[6]

جدید ذرائع ابلاغ

دعوتِ اسلامی کا اپنا ذرائع ابلاغ کا ایک وسیع نظام ہے۔ دعوت اسلامی نے 1996 میں ہی اپنی ویب سائٹ بنا لی تھی، جو اردو میں پہلی اسلامی ویب سائٹ ہے۔ 2009ء مدنی چینل کے نام سے ٹی وی چینل شروع کیا گیا، جس پر اردو، عربی، انگریزی، بنگلہ، ہندی وغیرہ میں دینی نشریات ہوتی ہیں۔ یہ پاکستان کا پہلا چینل ہے جو موسیقی اور اشتہارات نہيں دکھاتا یہ چینل دنیا کی سیٹلائٹس سے نشر ہوتا ہے۔[7][8][9]

تعلیمی ادارے

دعوت اسلامی نے فیضان مدینہ، مدرسۃ المدینہ، دارالمدینہ اور جامعۃ المدینہ جیسے ناموں سے دنیا بھر میں سینکڑوں دینی اور عصری تعلیم و تربیت کے لیے ادارے قائم کیے ہیں۔ جلد ہی اسلام آباد میں دارالمدینہ یونی ورسٹی کا قیام عمل میں لایا جا رہا ہے، جس کو منظور کرا لیا گیا ہے۔ مدرسۃ المدینہ آن لائن کا بھی سلسلہ ہے جس کے تحت انٹرنیٹ کے ذریعے قرآن کی مفت تعلیم دی جاتی ہے۔ 2013ء میں دعوت اسلامی نے دار المدنیہ انٹرنیشنل یونیورسٹی کے قیام کا فیصلہ کیا، جس کے لیے 2013ء میں پاکستان سینیٹ میں منظوری دی گئی۔[10]اپریل 2018ء میں سندھ حکومت نے اسی مقصد کے لیے دعوت اسلامی کو 150 ایکڑ زمین وقف کی، پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے دسمبر 2016ء میں فیضان مدینہ کا دورہ کیا تھا جہاں انھوں نے انتظامیہ کو یونیورسٹی کے قیام کا مشورہ دیتے ہوئے وزیر اعلیٰ سندھ کو معاونت کی ہدایت کی تھی۔[11]

نشر و اشاعت

دعوت اسلامی کے اشاعتی ادارے کا نام مکتبۃ المدینہ ہے۔ جس سے کتب و رسائل شائع کیے جاتے ہیں۔ مکتبة المدینہ سے شائع ہونے والی مختلف کتب و رسائل کے جدا جدا زبانوں میں تراجِم کر کے اسے دنیا کے کئی ممالِک میں بھیجنے کی ترکیب کی جاتی ہے۔ اس وقت دنیا کی 34 سے زائد زبانوں میں تراجِم ہو رہے ہیں : (1)عربی(2) فارسی (3)انگریزی(4) فرانسیسی (5)سواہلی(6) تامِل (7) سنگلا (8) چائنیز (9) ہندی (10)گجراتی (11)کریول (12) جرمن (13) اسپینش (14)رشین (15) بنگلہ (16) ہائوسا (17) پشتو (18)ڈینش وغیرہ [12]

سماجی خدمات

دعوت اسلامی نے معاشرے میں اصلاحی اور فلاحی کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا پاکستان میں آنے والے 2008 میں آنے والے ہولناک زلزلے، 2010 میں سیلاب کی ہر طرح سے مدد کی گی۔ جیل خانوں میں بھی تبلیغ کا کام کر رہے ہیں۔ جیل خانوں میں قرآن پاک کا حفظ و ناظرہ کی تعلیم، کنزالایمان کی تقسیم، محافل زکر و نعت، جب کے کراچی کی سینڑل جیل میں جامعہ کا بھی قیام عمل میں لایا گیا ے۔ اس کے علاوہ گونگے، بہرے اور نابینا افراد کے لیے بھی ایک الگ شعبہ قائم ہیں، جس کی وجہ سے ڈاکٹر حضرات اور ایسے افراد کے والدین، دعوت اسلامی کی بہت تعریف کرتے ہیں۔

تصاویر

مزید دیکھیے

حوالہ جات

  1. YouTube
  2. "آرکائیو کاپی". 29 اگست 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 31 جنوری 2013. 
  3. "Departments of DawateIslami | Dawat-e-Islami Introduction". 25 جنوری 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 31 جنوری 2013. 
  4. "آرکائیو کاپی". 10 مئی 2015 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 31 جنوری 2013. 
  5. محمد الیاس قادری، فیضان سنت، مکتبۃالمدینہ، کراچی 2006ء، جلد اول، صفحہ 1532
  6. مجلس المدینۃالعلمیہ، مدنی تحفہ، مکتبۃالمدینہ کراچی، صفحہ 22
  7. https://economictimes.indiatimes.com/topic/Madani-Channel
  8. https://www.spacedaily.com/reports/Madani_Channel_Broadcasts_Across_Asia_Pacific_On_AsiaSat_3S_999.html
  9. https://pakistani.pk/madani-channel/
  10. http://www.senate.gov.pk/uploads/documents/1362663195_884.pdf
  11. سہیل، ریاض (2018-05-02). "دعوت اسلامی کو زمین دینے کے فیصلے پر پیپلز پارٹی پر تنقید". BBC News اردو. اخذ شدہ بتاریخ 10 جولا‎ئی 2020. 
  12. "آرکائیو کاپی". 02 فروری 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 31 جنوری 2013. 

کتابیات

بیرونی روابط