شبیب بن عبد اللہ نہشلی

شبیب بن عبد اللہ نہشلی اہل بیت علیہم السلام کے اصحاب خاص، تابعین ، امیر المؤمنین کے صحابی اور کربلا کے شہیدوں میں سے ہیں ۔

نام و نسبترميم

شبیب بن عبد اللہ بنی نہشل قبیلے سے تعلق رکھتے ہیں جو قبیلۂ بنی تمیم کی ایک شاخ ہے اور عدنانی عرب شمار ہوتے ہیں۔وہ حرث بن سریع ہمدانی کے غلام تھے جو سیف بن حارث بن سریع ہمدانی اور مالک بن عبد اللہ بن سریع جابری کے ساتھ کربلا آئے اور وہ بصرے کے رہنے والے تھے۔زیادہ احتمال یہی ہے کہ شبیب بن عبدالله نہشلی با حبیب بن عبیدالله نہشلی[1] اور ابوعمرو نہشلی[2] ایک ہی شخص کے نام ہیں لیکن اس بات پر کوئی یقینی دلیل موجود نہیں ہے ۔

اہل بیت کے صحابیترميم

شبیب تابعین اور امام علی ؑ کے اصحاب میں تھے جنہوں نے جنگ جمل ،صفین اور نہروان میں امام کی ہمرکابی میں جنگ لڑی ۔امام علی ؑ کی شہادت کے بعد حضرت امام حسن ؑ کے ساتھ رہے [3] ۔ اور آخر کار حضرت امام حسین کے زمانے میں ان کے صحابی مانے جاتے تھے۔[4]

کربلاترميم

آپ مدینہ سے ہی امام حسین ؑ کے ساتھ تھے۔ روز عاشورا دشمنوں کے پہلے حملے[5] میں ظہر سے پہلے[6] شہید ہوئے۔ زیارت ناحیہ میں آپ کا نام ان الفاظ سے مذکور ہے : السَّلامُ عَلی شَبیبِ بْنِ عَبْد اللَّه النَّهْشَلی‌ [7]

حوالہ جاتترميم

  1. الاقبال بالاعمال الحسنہ، ابن طاووس، علی بن موسی، ج3، ص346.
  2. مثیرالاحزان، ابن نما حلی، ج1، ص42
  3. تنقیح المقال، مامقانی، عبدالله، ج2، ص81.
  4. الرجال، شیخ طوسی، ج1، ص101.
  5. تنقیح المقال، مامقانی، عبدالله، ج2، ص81.
  6. تسمیۃ من قتل مع الحسین علیہ السلام، فضیل کوفی، ج1، ص27
  7. بحارالانوار، مجلسی، محمدباقر، ج45، ص71.

مآخذترميم

  • سید ابن طاووس، الاقبال بالاعمال الحسنہ، ترجمہ، محمد روحی، نشر، سما‌ء قلم، قم، 1385ش.
  • ابن نما الحلي، نشر، موسسہ الامام المہدى، قم، 1365ش.
  • عبداللّه مامقانی، تنقیح المقال فی علم الرجال، چاپ سنگی نجف، 1349-1352ق.
  • طوسی، رجال شیخ طوسیُ چاپ جواد قیومی اصفہانی، قم، 1415.
  • كوفي اسدي، فُضيل، تسميہ مَنْ قُتل مع الحسين عليه السّلام، تحقيق، سيد محمدرضا حسينی جلالی، قم، ١٤٠٥ق.
  • مجلسی، محمد باقر، بحارالانوار الجامعہ لدرر اخبار الأئمہ الاطہار، تہران، اسلامیہ، بی‌تا، ج45؛

سانچےترميم