تولیدو گرجاگھر (اسہینی زبان میں: Catedral Primada Santa Mara de Toledo) تولیدو اسپین میں وقوع پزیر ایک رومن کیتھولک گرجاگھر ہے۔ تولیدو گرجاگھر تیرہویں صدی کا گرجاگھر ہے۔ اسپین کی کچھ تنظیموں کا کہنا ہے که یہ گرجاگھر گوتھک طرز تعمیر کا اسپین میں شاہ کار نمونہ ہے۔[1]

Primate Cathedral of Saint Mary of Toledo
Catedral Primada Santa María de Toledo (ہسپانوی میں)
Toledo Cathedral, from Plaza del Ayuntamiento.jpg
Main façade (facing west)
بنیادی معلومات
مقامطلیطلہ
متناسقات39°51′25.5″N 4°01′26″W / 39.857083°N 4.02389°W / 39.857083; -4.02389متناسقات: 39°51′25.5″N 4°01′26″W / 39.857083°N 4.02389°W / 39.857083; -4.02389
مذہبی انتسابرومن کیتھولک
رسمRoman, Mozarabic (Latin)
ملکہسپانیہ
سنہ تقدیس587
مذہبی یا تنظیمی حالتکیتھیڈرل
ثقافتی اہمیتیونیسکو عالمی ثقافتی ورثہ
سربراہیArchbishop Braulio Rodríguez Plaza
ویب سائٹwww.architoledo.org
تعمیراتی تفصیلات
معمارMaster Martín, Petrus Petri
نوعیتِ تعمیرکیتھیڈرل
طرز تعمیرگوتھک فن تعمیر
سنگ بنیاد1227
سنہ تکمیل1493
تفصیلات
سامنے کا رخمغرب-سمت
لمبائی120 میٹر (390 فٹ)
چوڑائی59 میٹر (194 فٹ)
چوڑائی (ناف)18 میٹر (59 فٹ)
انتہائی بلندی44.5 میٹر (146 فٹ)

اس کی اتعمیر 1226عیسوئ شروع کروائی تھی گئی تھی۔ اس میں آخری گوتھک تعاون 15ویں صدی (1493 میں) میں کیتھولک راجاؤں کے دورحکومت میں ہوا۔ اس میں مدیجان طرز تعمیر کی خاص خوبیاں موجود ہیں، خاص کر اس کا مٹھ۔ روشنی کے داخلے کے لیے شاندار راستہ بناتا ہے اور اس کے گنبد اس طرزتعمیر کی خاص خصوصیتیں ہیں۔ اس کو دویس تولیتانا (Dives Toletana لاطینی زبان میں اس کا مطکب ہے امیر تولیدو) بھی کہا جاتا ہے۔[2]

تصاویر کی گیلریترميم

حوالہ جاتترميم

  1. Rosario Díez del Corral Garnica (1987). Arquitectura y mecenazgo: la imagen de Toledo en el Renacimiento. Alianza. ISBN 978-84-206-7066-9. مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ.  Check date values in: |archive-date= (معاونت)
  2. In the 15th century this appellation was popularized through a Latin proverb exalting the four Spanish cathedrals considered the grandest, which says: Sancta Ovetensis, pulchra Leonina, dives Toledana, fortis Salmantina.

اسپین کے ادب میں تولیدو گرجاگھر کا تذکرہترميم

  • Camón Aznar, José. Historia general del arte, Tomo XVIII, colección Summa Artis. La escultura y la rejería españolas del siglo XVI. Editorial Espasa Calpe S.A. Madrid 1961.
  • Camón Aznar, José; Morales y Marín, José Luis; Valdivieso, Enrique. Historia general del arte, Tomo XXVII, colección Summa Artis. Arte español del siglo XVIII. Editorial Espasa Calpe S.A. Madrid 1984.
  • Chueca Goitia، Fernando (1975)، La Catedral De Toledo (الإسبانية میں)، Riga: Everest، ISBN 84-241-4719-7 
  • Enríquez de Salamanca، Cayetano (1992)، Curiosidades De Toledo (الإسبانية میں)، Madrid: El País /Aguilar، ISBN 84-03-59167-5 
  • Martí y Monsó, José. Estudios histórico-artísticos relativos principalmente a Valladolid. Basados en la investigación de diversos archivos. Primera edición 1892-1901. segunda edición facsímil, Valladolid 1992, Editorial Ámbito S.A. ISBN 84-86770-74-2.
  • Navascués Palacio، Pedro؛ Sarthou Carreres، Carlos (1997)، Catedrales de Espana (الإسبانية میں)، Madrid: Espasa Calpe، ISBN 84-239-7645-9 
  • Nieto Siria, José Manuel. Iglesia y génesis del Estado Moderno en Castilla (1369–1480), Madrid, 1993.
  • Pijoan, José. Historia general del arte, Tomo XI, colección Summa Artis. El arte gótico de la Europa occidental, siglos XIII, XIV y XV. Editorial Espasa Calpe S.A. Madrid 1953.
  • Polo Benito, José. El arte en España. Catedral de Toledo. Patronato Nacional de Turismo. Editorial H de J. Thomas, Barcelona.
  • Riera Vidal. Un día en Toledo. ISBN 84-400-5928-0.
  • Sánchez-Palencia, Almudena. Fundaciones del Arzobispo Tenorio: La capilla de San Blas en la Catedral de Toledo. Diputación de Toledo, 1985.
  • Conferencia Episcopal Española. Celebración eucarística según el rito Hispano-mozárabe. Madrid, 2000. ISBN 84-931476-5-6.
  • Zarco Moreno، Zarco (1991)، Toledo (الإسبانية میں)، León: Everest Pub، ISBN 84-241-4396-5 

خارجی روابطترميم