عالمی موسمیاتی تنظیم

 

عالمی موسمیاتی تنظیم (World Meteorological Organization - WMO) ایک بین الحکومتی تنظیم ہے جس کے ارکان 189 ممالک ہیں۔

عالمی موسمیاتی تنظیم
عالمی موسمیاتی تنظیم

Emblem of the United Nations.svg

مخفف WMO
OMM
ملک Flag of Switzerland (Pantone).svg سویٹزرلینڈ[1]  ویکی ڈیٹا پر (P17) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
صدر دفتر جنیوا, سویٹزرلینڈ
تاریخ تاسیس 1950
قسم اقوام متحدہ کا ادارہ
سربراہ Petteri Taalas Flag of Finland.svg فن لینڈ
باضابطہ ویب سائٹ www.wmo.int

اس تنظیم نے اقوام متحدہ کے ایک تحقیقی ادارے کے طور پر 19 مارچ 1950ء کو اپنی سرگرمیاں شروع کیں۔ بین الاقوامی سطح پر موسم سے متعلق معلومات کا تبادلہ اور ان کا استعمال ہی اس تنظیم کا مقصد ہے۔ اس تنظیم کا مستقل سیکریٹریٹ جنیوا میں اور علاقائی دفاتر افریقہ، ایشیا اور ریاستہائے متحدہ امریکامیں ہیں۔[2]

عالمی موسمی تبدیلیوں کا مطالعہ اور تجزیہترميم

عالمی موسمیاتی تبدیلیوں پر نظر رکھنے والی اس تنظیم کی فراہم کردہ معلومات کے مطاطق عالمی سطح پر موسمیاتی تبدیلیوں میں بہت بڑی تبدیلیاں رونما ہوئیں جس کی وجہ سے اٹلانٹا، کیریبین کا درجہ حرارت منفی اور پاکستان ، ایران، عمان سمیت دیگر ایشیائی ممالک میں گرمی کی شدت میں 50 سینٹی گریڈ سے زیادہ اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔[3][4]

حوالہ جاتترميم

  1. GRID ID: https://www.grid.ac/institutes/grid.426193.b
  2. جامع اردو انسائیکلوپیڈیا (جلد-3 سماجی علوم)، قومی کونسل برائے فروغِ اردو زبان، نئی دہلی، 2003ء، ص 62
  3. 2017 اب تک کا گرم ترین سال ہونے کا امکان
  4. "کیا ہم موسمیاتی تبدیلیوں کا مقابلہ کرنے میں اس زمین کے رہائشی کی حیثیت سے اپنا کردار ادا کررہے ہیں؟". دی یوتھ انٹرنیشنل. یوتھ پبلشرز. 2019-10-16. 16 اکتوبر 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 09 اکتوبر 2019.