پاکستان کے ایوان بالا انتخابات، 2021ء

2021 میں پاکستانی ایوان بالا (سینیٹ) کا انتخاب 3 مارچ 2021 کو ہوا تھا۔ پاکستان کے الیکشن کمیشن نے 11 فروری 2021 کو انتخابی شیڈول کا اعلان کیا۔ 104 میں سے 52 سینیٹرز 7 فروری 2021 کو ریٹائر ہوئے تھے۔ [1] خیبر پختونخواہ میں وفاق کے زیر انتظام قبائلی علاقوں کے انضمام کے بعد ، فاٹا کی نشستیں ختم کردی گئیں اور 8 میں سے 4 نشستوں پر انتخابات نہیں ہوں گے۔ باقی 4 نشستوں کو بھی 2024 میں تجدید نہیں کیا جائے گا۔ [2]

پاکستان ایوان بالا الیکشن 2021

→ 2018 3 مارچ 2021 2024 ←
  Pakistan Tehreek-e-Insaf flag (25-32 ratio).svg Flag of Pakistan People's Part.svg Flag of the Pakistan Muslim League (Q).svg
جماعت پی ٹی آئی پی پی پی ن لیگ

چئیرمن قبل انتخاب

صادق سنجرانی
آزاد

منتخب چیرمین

اعلان ہونا باقی

پس منظرترميم

اس سال کے انتخابات حزب اختلاف کی جماعتوں ، پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے اتحاد کی حکومت مخالف مہم کے درمیان کرائے گئے تھے۔ پی ڈی ایم رہنماؤں نے قبل ازیں صوبائی اور قومی اسمبلیوں سے بڑے پیمانے پر مستعفی ہونے کی دھمکی دی تھی ، اور سینیٹ انتخابات میں حصہ لینے سے انکار کردیا تھا لیکن بعد میں وہ دوبارہ معزول ہوگئے تھے۔ [3] [4]

انتخابات کے نتیجے میں بیشتر بحثوں نے سینیٹ کے انتخابات میں مشاہدہ کیے جانے والے بیلٹ کے راز سے گھیر لیا ، جس کی وجہ سے ہمیشہ کی طرح ووٹ خریدنے کے الزاماتت عائد ہوتے ہیں۔ [5] حکومت نے ایک مشروط صدارتی آرڈیننس پیش کیا اور بعد ازاں سپریم کورٹ آف پاکستان سے انتخابات کو کھلے رائے شماری کے ذریعے کرانے کے لئے رائے طلب کی۔ [6] [7] عدالت عظمیٰ نے اپنے فیصلے میں کہا ہے کہ انتخابات خفیہ رائے شماری کے ذریعے ہی کروائے جائیں لیکن ان کا راز مطلق نہیں ہے اور الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کو اس بات کا یقین کرنے کے لئے جدید ترین ٹکنالوجی کا استعمال کرنا چاہئے کہ "انتخابات کو ایمانداری کے ساتھ ، منصفانہ طریقے سے کرایا جائے۔ ، منصفانہ اور قانون کے مطابق اور اس کی بدعنوانیوں کے خلاف حفاظت کی جاتی ہے۔ [8] ای سی پی نے عدالت کی ہدایت کے جواب میں کہا کہ اس سال کے انتخابات ماضی کی مشق کے مطابق وقت کی کمی کی وجہ سے ہوں گے۔ [9]

انتخابات سے ایک رات قبل ، ایک ویڈیو سامنے آئی جس میں یوسف رضا گیلانی کے بیٹے علی حیدر گیلانی نے اپنے والد کی انتخابی بولی کے لئے لابنگ کی اور تین سرکاری قانون سازوں کو دکھایا کہ وہ کس طرح اپنے ووٹوں کو کالعدم کرتے ہیں ۔ [10] ایک آڈیو ریکارڈنگ بھی منظر عام پر آئی ، جس میں ناصر حسین شاہ نے پاکستان تحریک انصاف کے ان قانون سازوں کو یقین دہانی کرائی جنہوں نے مبینہ طور پر اپنے ووٹ فروخت کردیئے تھے۔ [11]

نتائجترميم

نتائج[12] · [13] · [14]
 
پارٹی ووٹ % سیٹ
کل اوپر جیت بعد میں +/-
جنرل خواتین ٹیکنوکریٹ اقلیت کل
پاکستان تحریک انصاف 12 5 9 4 4 1 18 25 +13
پاکستان پیپلز پارٹی 21 8 6 1 1 0 8 21
پاکستان مسلم لیگ ن 29 16 3 1 1 0 5 18 –11
بلوچستان عوامی پارٹی 10 3 3 1 1 1 6 13 +3
جمیعت علمائے اسلام 4 2 2 0 1 0 3 5 +1
متحدہ قومی موومنٹ 5 4 1 1 0 0 2 3 –2
عوامی نیشنل پارٹی 1 1 2 0 0 0 2 2 +1
نیشنل پارٹی پاکستان 5 3 0 0 0 0 0 2 –3
پشتونخاں ملی عوامی پارٹی 3 1 0 0 0 0 0 2 –1
جماعت اسلامی 2 1 0 0 0 0 0 1 –1
بلوچستان نیشنل پارٹی 1 1 1 0 0 0 1 1
پاکستان مسلم لیگ (ف) 1 0 0 0 0 0 0 1
پاکستان مسلم لیگ (ق) 0 0 1 0 0 0 1 1 +1
آزاد 10 7 1 1 0 0 2 5 –5
درست ووٹ
خراب یا خالی ووٹ
کل 100 104 52 29 9 8 2 48 100 -4
غذائیت
رجسٹرڈ ووٹرز / ٹرن آؤٹ

انتظامی یونٹ کے نتائجترميم

ہر نشست کے لئے کامیاب امیدواروں کا اعلان 10 مارچ 2021 کو کیا گیا تھا۔[15]

صوبےترميم

پنجاب
سیٹ کی قسم جیتنے والے
جنرل سیف اللہ نیازی

(پی ٹی آئی)

عون عباس بپی

(پی ٹی آئی)

اعجاز چوہدری

(پی ٹی آئی)

افنان اللہ خان

(مسلم لیگ ن)

ساجد میر

(مسلم لیگ ن)

عرفان الحق صدیقی

(مسلم لیگ ن)

کامل علی آغا

(مسلم لیگ ق)

ٹیکنوکریٹ سید علی ظفر (پی ٹی آئی) اعظم نذیر تارڑ (مسلم لیگ ن)
خواتین زرق سہروردی (پی ٹی آئی) سعدیہ عباسی (مسلم لیگ ن)
سندھ
سیٹ کی قسم جیتنے والے
جنرل شیری رحمان

(پیپلز پارٹی)

سلیم مانڈوی والا

(پیپلز پارٹی)

علی شاہ جاموٹ

(پیپلز پارٹی)

تاج حیدر

(پیپلز پارٹی)

شہادت اعوان

(پیپلز پارٹی)

فیصل واوڈا

(پی ٹی آئی)

فیصل سبزواری

(ایم کیو ایم)

ٹیکنوکریٹ فاروق نائیک (پیپلز پارٹی) سیف اللہ ابرو (پی ٹی آئی)
خواتین پلوشہ خان (پیپلز پارٹی) خالدہ ادیب (ایم کیو ایم)
خیبرپختونخوا
سیٹ کی قسم جیتنے والے
جنرل محسن عزیز

(پی ٹی آئی)

لیاقت ترکائی

(پی ٹی آئی)

شبلی فراز

(پی ٹی آئی)

فیصل سلیم رحمان

(پی ٹی آئی)

ذیشان خانزادہ

(پی ٹی آئی)

ہدایت اللہ

اے این پی

عطا الرحمان

(جے یو آئی)

ٹیکنوکریٹ دوست محمد خان (پی ٹی آئی) ہمایوں مہمند (پی ٹی آئی)
خواتین ثانیہ نشتر (پی ٹی آئی) فلک ناز (پی ٹی آئی)
اقلیت گردیپ سنگھ (پی ٹی آئی)
بلوچستان
سیٹ کی قسم جیتنے والے
جنرل محمد عبد القادر

(آزاد)

احمد عمر احمدزئی

(بی اے پی)

سرفراز بگٹی

(بی اے پی)

منظور احمد

(بی اے پی)

عمر فاروق

(اے این پی)

عبد الغفور حیدری

(جے یو آئی)

محمد قاسم

(نیشنل پارٹی)

ٹیکنوکریٹ سعید احمد ہاشمی (بی اے پی) کامران مرتضیٰ (جے یو آئی)
خواتین ثمینہ ممتاز (بی اے پی) نسیمہ احسان (آزاد)
اقلیت دنیش کمار (بی اے پی)

وفاق کے زیر انتظام یونٹترميم

ICT
سیٹ کی قسم جیتنے والے
جنرل یوسف رضا گیلانی

(پیپلز پارٹی)

خواتین فوزیہ ارشد

(پی ٹی آئی)

چیئرمین اور ڈپٹی چیئرمین کا انتخابترميم

اپوزیشن اور حکومتی بنچوں سے تعلق رکھنے والے دو امیدواروں نے 12 مارچ 2021 کو انتخابات لڑا۔ حکومتی امیدوار صادق سنجرانی اور مرزا محمد آفریدی نے اپنی اپنی نشستوں پر انتخابات میں کامیابی حاصل کی۔[16]

امیدوار مقابلہ کیا جماعت ووٹ حاصل ہوئے حمایت
صادق سنجرانی چیئرمین بی اے پی 48  Y حکومتی
مرزا محمد آفریدی ڈپٹی چیئرمین پی ٹی آئی 54  Y
یوسف رضا گیلانی چیئرمین پیپلز پارٹی 42  N اپوزیشن
عبد الغفور حیدری ڈپٹی چیئرمین جے یو آئی 44  N

حوالہ جاتترميم

  1. "Why Sanjrani should quit?". www.thenews.com.pk (بزبان انگریزی). 2019-07-12. اخذ شدہ بتاریخ 24 جولا‎ئی 2019. 
  2. FATA: abolished and merged
  3. "PDM's confusion over resignations persists". www.thenews.com.pk (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 02 مارچ 2021. 
  4. Reporter، The Newspaper's Staff (2021-02-11). "PDM lauded for taking part in Senate polls". DAWN.COM (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 02 مارچ 2021. 
  5. "Senate election: Defence minister warns opposition against horse-trading". www.thenews.com.pk (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 02 مارچ 2021. 
  6. "President Alvi signs off on ordinance to hold Senate polls through open vote". DAWN.COM (بزبان انگریزی). 2021-02-06. اخذ شدہ بتاریخ 02 مارچ 2021. 
  7. "Govt to move Supreme Court over Senate polls this week". The Express Tribune (بزبان انگریزی). 2020-12-21. اخذ شدہ بتاریخ 02 مارچ 2021. 
  8. Bhatti، Haseeb (2021-03-01). "SC says Senate elections to be held through secret ballot under Article 226 of Constitution". DAWN.COM (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 02 مارچ 2021. 
  9. Chaudhry، Fahad (2021-03-02). "Senate elections on March 3 to be held as per past practice: ECP". DAWN.COM (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 02 مارچ 2021. 
  10. Qureshi، Raiq (2021-03-02). "ECP should disqualify Gillani after his son's video leak: Fawad". Associated Press Of Pakistan (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 02 مارچ 2021. 
  11. "Leaked audio reveals Nasir Shah giving assurance to 'sold' PTI lawmakers". ARY NEWS (بزبان انگریزی). 2021-03-02. اخذ شدہ بتاریخ 02 مارچ 2021. 
  12. (انگریزی میں) PTI makes substantial gains in Senate but suffers major setback in Islamabad sur Dawn.com
  13. (انگریزی میں) Senate Election 2021: PTI emerges as largest party, but victory bittersweet sur geo.tv
  14. "Commission électorale". www.ecp.gov.pk. اخذ شدہ بتاریخ 04 مارچ 2021. .
  15. "Notification of Returned Candidates" (PDF). Election Commission of Pakistan. 10 March 2021. اخذ شدہ بتاریخ 13 مارچ 2021. 
  16. Guramani، Nadir (2021-03-12). "Defying numbers, PTI-backed candidates win coveted Senate chairman and deputy slots". DAWN.COM (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 13 مارچ 2021.