مرکزی مینیو کھولیں

ہیکل دوم (عبرانی: בֵּית־הַמִּקְדָּשׁ הַשֵּׁנִי‎، بیت ہمقدش ہاشینی) ایک یہود مقدس ہیکل تھا جو یروشلم کے حار ہابیت میں 516 ق م اور 70ء کے درمیان میں قائم رہا تھا۔ یہودی روایات کے مطابق اس ہیکل نے ہیکل سلیمانی (ہیکل اول) کی جگہ لی تھی، جسے بابلیوں نے 586 ق م میں تباہ کر دیا تھا، جب یروشلم فتح کر لیا گیا تھا اور مملکت یہودہ کے لوگوں کو بابل جلاوطن کر دیا گیا تھا۔

ہیکل دوم
בית־המקדש השני (بیت ہمقدش ہاشینی)
Jerusalem Modell BW 3.JPG
یسرئیل میوزیم میں موجود ہیکل ہیرودیس کا نمونہ جو 1996ء میں بنایا گیا تھا، یہ ارض مقدسہ نمونۂ یروشلم کا ایک حصہ تھا۔ نمونہ یوسیفس کی تحریروں سے متاثر ہوکر بنایا گیا تھا۔
متبادل نام ہیکل ہیرودیس
مقام یروشلم
متناسقات 31°46′41″N 35°14′07″E / 31.778013°N 35.235367°E / 31.778013; 35.235367
قسم ہیکل
حصہ ہیرودیسی کوہ ہیکل
اونچائی 45.72 میٹر (150.0 فٹ)
تاریخ
معمار زربابل، لیکن بڑی حد تک ہیرودیس اعظم نے تجدید/مرمت کرائی۔
مواد مقامی چونا پتھر
قیام تقریباً 537 – 516 ق م
متروک 70ء (تباہ ہو گیا)
ادوار ابتدائی رومی سلطنت
مزید معلومات
کھدائی تواریخ 1930ء، 1967ء، 1968ء، 1970ء–1978ء، 1996ء–1999ء، 2007ء
ماہرین آثار قدیمہ چارلس وارن، بنیامین مزر، رونی ریچھ، عیلی شکرون، یعقوب بیلگ
حالت زوال، آثاریاتی پارک
ملکیت متنازع، موجودہ یروشلم اسلامک وقف کے کنٹرول میں ہے۔
عوامی رسائی ہاں (محدود)

یہودی معادیات کے ایک عقیدے کے تحت ہیکل سوم (בית המקדש השלישי، بیت ہمقدش ہاشلشی) مستقبل میں ہیکل دوم کی جگہ لے گا۔

حوالہ جاتترميم