ایمام علی رحمان (ولادت: 5 اکتوبر 1952ء) ایک تاجک سیاست دان ہیں جو تاجکستان میں 1992ء سے عنان حکومت ہاتھ میں لیے ہوئے ہیں۔ وہ 1994ء سے ملک کے صدر ہیں۔ ان کے صدارت کے ابتدائی دور میں 100000 لوگ خانہ جنگی میں مارے گئے تھے اور اس وجہ سے وہ [5] ان کی حکومت کرپشن سے جڑی سخت گیر پالیسیوں کے سبب بدنام ہیں۔[6]

امام علی رحمان
(تاجک میں: Эмомалӣ Раҳмон ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Emomali Rahmon (2017-02-27).jpg
 

مناصب
Flag of the President of Tajikistan.svg صدر تاجکستان (3 )   ویکی ڈیٹا پر (P39) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
آغاز منصب
19 نومبر 1994 
Fleche-defaut-droite-gris-32.png رحمان نبییف 
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
معلومات شخصیت
پیدائشی نام (تاجک میں: Эмомалӣ Шарифович Раҳмонов ویکی ڈیٹا پر (P1477) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیدائش 5 اکتوبر 1952 (68 سال)[1][2]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دنغرہ  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of the Soviet Union (1922–1923).svg سوویت اتحاد
Flag of Tajikistan.svg تاجکستان  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جماعت اشتمالی جماعت سوویت اتحاد  ویکی ڈیٹا پر (P102) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تعداد اولاد 9 [3]  ویکی ڈیٹا پر (P1971) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ سیاست دان[4]،  ریاست کار  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان تاجک زبان،  روسی  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عسکری خدمات
اعزازات
Order of Mubarak the Great (Kuwait) - ribbon bar.gif مبارک الکبیر اعزاز
Order of the Republic of Serbia - 2nd Class - ribbon bar.png آرڈر آف دی ریپبلک آف سربیا
Ord.Nishan-i-Pakistan.ribbon.gif نشان پاکستان 
AZ Heydar Aliyev Order ribbon.png حیدر علییف اعزاز  ویکی ڈیٹا پر (P166) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دستخط
Emomali Rahmon signature.png
 
ویب سائٹ
ویب سائٹ باضابطہ ویب سائٹ  ویکی ڈیٹا پر (P856) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

حوالاجاتترميم

  1. Munzinger person ID: https://www.munzinger.de/search/go/document.jsp?id=00000021905 — بنام: Emomali Rachmon — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  2. Brockhaus Enzyklopädie online ID: https://brockhaus.de/ecs/enzy/article/rachmon-emomali-imamali — بنام: Emomali (Imamali) Rachmon — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  3. http://modern.az/articles/35043/1/
  4. ربط : https://d-nb.info/gnd/129949973  — اخذ شدہ بتاریخ: 24 جون 2015 — اجازت نامہ: CC0
  5. https://archive.is/20120724011159/www.cbsnews.com/8301-503543_162-20067645-503543.html
  6. "The world's enduring dictators"۔ CBS News. 16 مئی، 2011.

بیرونی روابطترميم