برنداون گارڈنز

کرناٹک ، بھارت میں باغ

برنداون گارڈنز ایک باغ ہے جو میسور [1] سے 12 کلومیٹر دور بھارتی ریاست کرناٹک کے منڈیا ضلع میں واقع ہے۔ یہ کرشنا راجساگر ڈیم سے ملحق ہے جو دریائے کاویری کے پار بنایا گیا ہے۔ [2] اس باغ کی تعمیر کا کام سال 1927ءمیں شروع ہوا اور 1932ء میں مکمل ہوا۔ [3] [4] ہر سال تقریباً 20 لاکھ سیاح یہاں آتے ہیں۔ یہ باغ سری رنگا پٹنہ کے بڑے پرکشش مقامات میں سے ایک ہے۔ [5] سر مرزا اسماعیل، میسور کے دیوان، جوباغات کے بڑے شوقین تھے، برنداون باغات کی بنیاد رکھی اور جدید منڈیا ضلع میں 120,000 ایکڑ (490 کلومیٹر 2 ) کو سیراب کرنے کے لیے دریائے کاویری کی اعلیٰ سطح کی نہر بنائی۔ ان کوتحریک حیدرعلی کے بنگلور میں تعمیر کردہ لال باغ سے ملی تھی۔

برنداون گارڈن میں رات کے وقت فوارے
برنداون گارڈن فاؤنٹینز رات کے وقت
کرشنا راجساگرا ڈیم اور ملحقہ برنداون گارڈنز
کرشنا راجہ ساگرا ڈیم
ڈیم پر کاویری کا مجسمہ

باغترميم

مالیاتترميم

گیلریترميم

نوٹسترميم

  1. "Brindavan Gardens, timings, entry ticket cost, price, fee - Mysore Tourism 2021". mysoretourism.in. 09 دسمبر 2021 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 31 دسمبر 2020. 
  2. "Brindavan Garden (KRS-Krishna Raja Sagar)". 
  3. "Brindavan Gardens". Horticultural Department, Government of Karnataka. 10 اپریل 2009 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 28 فروری 2007. 
  4. "Brindavan Gardens to get a facelift for Dasara". The Hindu. 14 August 2004. 25 جنوری 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 28 فروری 2008. 
  5. Gauri Satya (11 January 2008). "Mysore sees steady rise in tourist flow". Business Standard. اخذ شدہ بتاریخ 28 فروری 2008.