سامیہ حسن (انگریزی: Samia Suluhu)(ولادت: 27 جنوری 1960ء) موجودہ صدر تنزانیہ ہیں۔ انھوں نے سابق صدر جان موگوفلی کی وفات کے بعد 19 مارچ 2021ء کو صدارت کا حلف لیا۔ وہ تنزانیہ کی پہلی خاتون صدر ہیں۔ واضح ہو تنزانیہ میں صدارتی نظام رائج ہے۔ وہ اصلا زنجبار کی ہیں۔ ان کا تعلق حکمراں دایاں بازو سیاسی جماعت شاما شا مپیندوزی (CCM) سے ہے۔ وہ برونڈی میں سیلفی کینگی اور روانڈا میں اگاتی یونجلیمانا کے بعد تیسری افریقی صدر ریاست ہیں۔

سامیہ حسن
(سواحلی میں: Samia Suluhu Hassan ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تفصیل= Suluhu in مئی 2017
تفصیل= Suluhu in مئی 2017

6th صدر تنزانیہ
آغاز منصب
19 مارچ 2021
وزیر اعظم Kassim Majaliwa
نائب صدر TBD
جان موگوفلی
 
10ویں ناغب صدر تنزانیہ
مدت منصب
5 نومبر 2015 – 19 مارچ 2021
صدر John Magufuli
Mohamed Gharib Bilal
TBD
Minister of State for Union Affairs for the Vice-President's Office
مدت منصب
29 نومبر 2010 – 5 نومبر 2015
صدر جاکایا کیکویتے
Muhammed Seif Khatib
جنوری Makamba
رکن پارلیمان
برائے Makunduchi
مدت منصب
نومبر 2010 – جولائی 2015
 
Ameir Timbe
Minister of Tourism, Trade and Investment
مدت منصب
2005 – 10
صدر Amani Karume
Mussa A. Silima
Said Ali Mbarouk
Minister of Labour, Gender Development and Children
مدت منصب
2000 – 05
صدر Amani Karume
معلومات شخصیت
پیدائش 27 جنوری 1960ء (64 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت تنزانیہ   ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جماعت جماعت انقلاب   ویکی ڈیٹا پر (P102) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اولاد 4
تعداد اولاد
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ مانچسٹر   ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ سیاست دان ،  ماہر معاشیات   ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مادری زبان سواحلی زبان   ویکی ڈیٹا پر (P103) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان انگریزی ،  سواحلی زبان   ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Twitter SuluhuSamia
اعزازات
ٹائم 100   (2022)[1]  ویکی ڈیٹا پر (P166) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ابتدائی زندگی

ترمیم

ان کی ولادت 27 جنوری 1960ء کو سلطنت زنجبار میں ہوئی۔[2]

انھوں نے سیکنڈری تعلیم 1977ء میں مکمل کی اور عملی زندگی میں مشغول ہو گئیں مگر کام کرنے کے ساتھ ساتھ مختصر مدتی کورس کرتی رہیں۔ 1986ء میں نظم و نسق عامہ میں موزمبے یونیورسٹی سے گریجویشن کیا۔[3]

1992ء میں انھوں نے جامعہ مانچسٹر میں داخلہ لیا اور 1994ء میں وہاں سے اکنامکس میں پوسٹ گریجویٹ ڈپلوما کیا۔[4] 2015ء میں اوپن یونیرسٹی آف تنزانیہ اور سدرن نیو ہیمسفایر یونیورسٹی کے اشتراکی پروگرام میں کمیونٹی اکنامکس میں ایم ایس سی کی ڈگری حاصل کی۔[3]

کیرئر

ترمیم

سیکنڈری تعلیم کے بعد انھوں نے وزارت پلاننگ اور ڈولپمینٹ میں کلرک کی نوکری کرلی۔ نظم و نسق عامہ میں گریجویشن کرنے کے بعد عالمی غذائی پروگرام میں ان کا تقرر ہو گیا۔[3]

حوالہ جات

ترمیم
  1. https://time.com/collection/100-most-influential-people-2022/6177684/samia-suluhu-hassan/
  2. "Samia Suluhu Hassan—Tanzania's new president"۔ BBC News (بزبان انگریزی)۔ 19 مارچ 2021۔ اخذ شدہ بتاریخ 21 مارچ 2021 
  3. ^ ا ب پ "Member of Parliament CV"۔ Parliament of Tanzania۔ 13 جولائی 2015 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 19 فروری 2013