عبداللہ چغتائی

پاکستانی آرکیٹیکٹ، ماہر اسلامی تعمیرات، مؤرخ

ڈاکٹر محمد عبد اللہ چغتائی (پیدائش: 23 نومبر، 1896ء - وفات: 19 دسمبر، 1984ء) پاکستان سے تعلق رکھنے و الے نامور آرکیٹیکٹ، ماہر اسلامی تعمیرات، مؤرخ اور مصنف تھے۔

ڈاکٹر محمد عبداللہ چغتائی
پیدائش23 نومبر 1896(1896-11-23)ء
لاہور، برطانوی ہندوستان
وفات19 دسمبر 1984(1984-12-19) (عمر  88 سال)
لاہور، پاکستان
قلمی نامڈاکٹر محمد عبداللہ چغتائی
پیشہآرکیٹیکٹ، ماہر اسلامی تعمیرات، مؤرخ
زباناردو، انگریزی
نسلپنجابی
شہریتFlag of پاکستانپاکستانی
تعلیمپی ایچ ڈی (مقالہ:تاج محل)
مادر علمیمیو اسکول آف آرٹس لاہور
جامعہ پنجاب
پیرس یونیوسٹی
اصنافاسلامی تعمیرات، تاریخ
نمایاں کامتاریخ نقش و نگار
بادشاہی مسجد
غربی آرٹ کی مختصر تاریخ
اسلامی مصوری
اسلامی خطاطی

حالات زندگیترميم

ڈاکٹر محمد عبد اللہ چغتائی 23 نومبر، 1896ء کو محلہ چابک سواراں، لاہور، برطانوی ہندوستان میں پیدا ہوئے[1]۔ وہ نامور مصور عبدالرحمٰن چغتائی کے بڑے بھائی تھے۔ انہون نے میو اسکول آف آرٹس لاہور، جامعہ پنجاب اور پیرس یونیوسٹی سے تعلیم حاصل کی اور تاج محل آگرہ کے موضوع پر مقالہ لکھ کر پیرس یونیوسٹی سے 1937ء میں پی ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کی۔[1]

خدماتترميم

ڈاکٹر محمد عبد اللہ چغتائی نے اسلامی فنون لطیفہ بالخصوص فن تعمیر کو اپنی تحقیق اور تحریر کا مرکز بنایا اور اس موضوع پر لاتعداد کتب یادگار چھوڑیں۔ ان کی تصانیف میں تاریخ نقش و نگار، بادشاہی مسجد، مساجد عالم، مساجد لاہور، اماکن لاہور، مغربی آرٹ کی مختصر تاریخ، اسلامی مصوری، پنجاب میں مصوری کی ایک صدی، اسلامی خطاطی اور فنون لطیفہ کے نام سر فہرست ہیں۔[1]

تصانیفترميم

تاریخ نقش و نگار

  • بادشاہی مسجد
  • مساجد عالم
  • مساجد لاہور
  • اماکن لاہور
  • مغربی آرٹ کی مختصر تاریخ
  • اسلامی مصوری
  • پنجاب میں مصوری کی ایک صدی
  • اسلامی خطاطی اور فنون لطیفہ

وفاتترميم

ڈاکٹر محمد عبد اللہ چغتائی 19 دسمبر، 1984ء کو لاہور، پاکستان میں وفات پا گئے۔ وہ لاہور میں میانی صاحب کے قبرستان میں آسودۂ خاک ہیں۔[1]

حوالہ جاتترميم

  1. ^ ا ب پ ت ص 570، پاکستان کرونیکل، عقیل عباس جعفری، ورثہ / فضلی سنز، کراچی، 2010ء